உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Parliament کا بجٹ سیشن کا دوسرا مرحلہ آج سے، یوکرین میں پھنسے ہندوستانیوں سمیت کئی ایشوز پر حکومت کو گھیرنے کی تیاری

    پارلیمنٹ بجٹ سیشن کے دوسرے مرحلے کی آج سے ہورہی ہے شروعات۔

    پارلیمنٹ بجٹ سیشن کے دوسرے مرحلے کی آج سے ہورہی ہے شروعات۔

    پارلیمنٹ کے اجلاس کا دوسرا مرحلہ ایک ایسے وقت میں شروع ہوگا جب بھارتیہ جنتا پارٹی نے ابھی کچھ دن پہلے ہی اتر پردیش، اتراکھنڈ، گوا اور منی پور اور عام آدمی پارٹی نے پنجاب میں اسمبلی انتخابات میں کامیابی حاصل کی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس کا دوسرا مرحلہ پیر سے شروع ہوگا، جس میں اپوزیشن حکومت بڑھتی ہوئی بے روزگاری، ایمپلائز پراویڈنٹ فنڈ پر سود کی شرح میں کمی اور جنگ زدہ یوکرین میں پھنسے ہندوستانیوں کے انخلاء سمیت کئی معاملات پر بحث کرے گی۔ بجٹ تجاویز کے لیے پارلیمنٹ سے منظوری حاصل کرنا اور مرکز کے زیر انتظام جموں و کشمیر کے لیے بجٹ پیش کرنا حکومت کے ایجنڈے میں سرفہرست ہوگا۔ وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن آج پیر کو جموں و کشمیر کا بجٹ پیش کریں گی اور دوپہر کے کھانے کے بعد کی کارروائی کے دوران ایوان میں اس پر بحث ہو سکتی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      خود کی حکومت خطرے میں اور ہندوستان کو جواب دینے کی بات کررہے ہیں پاکستانی PMعمران خان!

      حکومت نے آئین (شیڈولڈ ٹرائب) آرڈر (ترمیمی) بل کو لوک سبھا میں غور کرنے اور پاس کرنے کے لیے بھی درج کیا ہے۔ بجٹ اجلاس کے پہلے مرحلے میں 29 جنوری سے 11 فروری تک لوک سبھا اور راجیہ سبھا کی کارروائی دو مختلف شفٹوں میں چلائی گئی۔ تاہم اس بار کووڈ-19 سے متعلق صورتحال میں بہتری کی وجہ سے لوک سبھا اور راجیہ سبھا کی کارروائی صبح 11 بجے سے ایک ساتھ چلے گی۔

      یہ بھی پڑھیں:
      پونے دو گھنٹے چلی وزیراعظم اوریوگی آدتیہ ناتھ کی میٹنگ،PMمودی نے ٹوئٹ کرکے کہی یہ بات

      29 جنوری کو شروع ہوا تھا بجٹ سیشن کا پہلا مرحلہ
      پارلیمنٹ کے اجلاس کا دوسرا مرحلہ ایک ایسے وقت میں شروع ہوگا جب بھارتیہ جنتا پارٹی نے ابھی کچھ دن پہلے ہی اتر پردیش، اتراکھنڈ، گوا اور منی پور اور عام آدمی پارٹی نے پنجاب میں اسمبلی انتخابات میں کامیابی حاصل کی ہے۔ اس سے قبل بجٹ اجلاس کا پہلا مرحلہ 29 جنوری کو پارلیمنٹ کے سنٹرل ہال میں صدر رام ناتھ کووند کے لوک سبھا اور راجیہ سبھا کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کے ساتھ شروع ہوا، جس کے بعد اقتصادی سروے پیش کیا گیاتھا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: