ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بنگال: اسمبلی الیکشن کے پیش نظر ہند - بنگلہ دیش سرحد کے قریبی اضلاع میں بڑھائی گئی سیکورٹی

حکمراں جماعت ترنمول کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ بنگلہ دیش سے ملحقہ سرحدی علاقوں میں بی ایس ایف جوانوں کے ذریعہ لوگوں کو ڈرا دھمکا کر بی جے پی کے حق میں ووٹ ڈالنے پر مجبور کیا جارہا ہے۔

  • Share this:
بنگال: اسمبلی الیکشن کے پیش نظر ہند - بنگلہ دیش سرحد کے قریبی اضلاع میں بڑھائی گئی سیکورٹی
بنگال: اسمبلی الیکشن کے پیش نظر ہند - بنگلہ دیش سرحد کے قریبی اضلاع میں بڑھائی گئی سیکورٹی

کولکاتا: بنگال میں امسال ہونے والے اسمبلی الیکشن کے لئے سیاسی سرگرمیاں جاری ہیں، سیاسی بیان بازیوں کا بھی سلسلہ جاری ہے۔ وہیں الیکشن کے موقع پر اسمگلنگ، روہینگیا اور بنگلہ دیشی کا مدعا بھی زور و شور سے اٹھایا جارہا ہے۔ حکمراں جماعت ترنمول کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ بنگلہ دیش سے ملحقہ سرحدی علاقوں میں بی ایس ایف جوانوں کے ذریعہ لوگوں کو ڈرا دھمکا کر بی جے پی کے حق میں ووٹ ڈالنے پر مجبور کیا جارہا ہے۔ وہیں بی جے پی نے الیکشن کمیشن میں شکایت درج کرائی ہےکہ حکومت کی جانب سے بنگلہ دیشی اور روہنگیائی شہریوں کے نام ووٹر لسٹ میں شامل کئے گئے ہیں۔


الیکشن کمیشن نے اس سلسلے میں دنوں ہی پارٹیوں سے ثبوت طلب کیا ہے وہیں بی ایس ایف نے اپنی سرگرمیاں تیز کرتے ہوئے اسمبلی انتخابات کے پیش نظر، بنگال کے قریب ہند بنگلہ دیش سرحد پر تعینات بارڈر سیکورٹی فورسیز (بی ایس ایف) کی ٹیم نے اضافی چوکسی بڑھا دی ہے۔ بی ایس ایف کی جانب سے کہا گیا ہے کہ حالیہ دنوں میں ہند بنگلہ دیش سرحد پر اسمگلنگ کے واقعات میں  کمی آئی ہے اور نہ صرف مویشی اور نشیلی اشیا بلکہ اسلحہ کی اسمگلنگ کو بھی بڑے پیمانے پر روکنے میں بی ایس ایف کو کامیاب ملی ہے۔


بی ایس ایف نے اپنی سرگرمیاں تیز کرتے ہوئے اسمبلی انتخابات کے پیش نظر، بنگال کے قریب ہند بنگلہ دیش سرحد پر تعینات بارڈر سیکورٹی فورسیز (بی ایس ایف) کی ٹیم نے اضافی چوکسی بڑھا دی ہے۔
بی ایس ایف نے اپنی سرگرمیاں تیز کرتے ہوئے اسمبلی انتخابات کے پیش نظر، بنگال کے قریب ہند بنگلہ دیش سرحد پر تعینات بارڈر سیکورٹی فورسیز (بی ایس ایف) کی ٹیم نے اضافی چوکسی بڑھا دی ہے۔


بی ایس ایف کے ایک سینئر افسر نے بتایا کہ انتخابات کے دوران، جعلی نوٹوں کی کھیپ کے ساتھ بڑے پیمانے پر اسلحہ کی اسمگلنگ بھی سرحد پار سے کی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ دہشت گردی کی کارروائیوں کے بارے میں بھی چوکسی برتی جارہی ہے۔ لہٰذا، بی ایس ایف نے اس پر بنگلہ دیش بارڈر گارڈز (بی جی بی) کے ساتھ ہم آہنگی کی ہے اور سرحد پر جرائم کی روک تھام کے لئے ہر ممکن کوشش کی جا رہی ہے۔ ساتھ ہی لوگوں کو سول خدمات سے جوڑے رکھنے کے لئے علاقوں میں کیمپ لگائے جارہے ہیں، جس میں بچوں کو تعلیم، سرکاری ملازمتوں کے لئے رہنمائی اور کونسلنگ کی جارہی ہے۔ اسی وجہ سے، مقامی نوجوان جذباتی طور پر بی ایس ایف کے ساتھ ہیں اور جب وہ سرحد پر کسی بھی مشکوک سرگرمی کو دیکھتے ہیں تو فوری طور پر بی ایس ایف کو آگاہ کیا جاتا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 02, 2021 12:55 PM IST