ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کشمیری پنڈتوں کی خدمات نے اردو زبان کو کیا مالا مال ، سیمینار میں مقررین کا اظہار خیال

کولکاتہ کے کلکتہ گرلس کالج میں این سی پی یو ایل کے اشتراک سے منعقدہ سمینار میں مقررین نے کشمیری پنڈتوں کی ادبی خدمات کو اہم بتاتے ہوٸے اسے سامنے لانے کی ضرورت پر زور دیا ۔

  • Share this:
کشمیری پنڈتوں کی خدمات نے اردو زبان کو کیا مالا مال ، سیمینار میں مقررین کا اظہار خیال
کشمیری پنڈتوں کی خدمات نے اردو زبان کو کیا مالا مال ، سیمینار میں مقررین کا اظہار خیال

اردو ایک ایسی زبان جو کسی خاص طبقے و فرقے تک محدود نہیں ہے بلکہ اس زبان کی شیرنی نے ہر ایک کو محظوظ کیا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ اردو زبان کی ادبی خدمات میں ہر طبقہ پیش پیش رہا ہے ۔ خاص کر کشمیری پنڈتوں کی خدمات نے اس زبان کو ادبی سطح پر مالا مال کیا ہے ۔ کولکاتہ میں کشمری پنڈتوں کے اردو خدمات کے عنوان سے منعقدہ سیمینار میں مقررین نے ان خیالات کا اظہار کیا ۔


کولکاتہ کے کلکتہ گرلس کالج میں این سی پی یو ایل کے اشتراک سے منعقدہ سمینار میں مقررین نے کشمیری پنڈتوں کی ادبی خدمات کو اہم بتاتے ہوٸے اسے سامنے لانے کی ضرورت پر زور دیا ۔ مقررین نے کشمیر و کشمیری پنڈتوں  کو لے کر کی جانے والی سیاست کو افسوسناک بتاتے ہوٸے ان کے ادبی خدمات ، فرقہ وارانہ ہم اہنگی اور قومی یکجہتی کے پیغام کو سامنے لانے کی ضرورت پر زور دیا ۔


سمینار میں راجیہ سبھا ایم پی ندیم الحق نے اردو زبان کو ایک خاص طبقے تک محدود کٸے جانے کے کوشیش کو سیاسی بتاتے ہوٸے کہا کہ اس سوچ کو بدلنے کی ضرورت ہے اور اس زبان کے لٸے مختلف طبقات کی خدمات کو سامنے لانے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کشمیری پنڈتوں کی خدمات کو اہم بتایا جبکہ پروگرام میں شریک پروفیسر فاضل احسن ہاشم نے کہا کہ یہ کشمیری پنڈت ہی تھے ، جن میں پنڈت بریجی نراٸن ، پنڈت چکسبت جیسےعظیم شعرا و ادبا نے اردوزبان وادب کی ترویج وترقی میں اہم رول ادا کیا ۔


سمینار میں کالج کی پرنسپل ڈاکٹر ستیہ اپادھیاٸے نے موجودہ حالات کو بہتر بنانے کے لٸے بہترین تعلیم کی ضرورت پر زور دیا جبکہ پروفیسر نعیم انیس نے ملک کے موجودہ حالات میں شعرا و ادبا کو آگے آنے اور محبت کے پیغام کو مظبوط بنانے کی ضرورت پر زور دیا ۔
First published: Feb 08, 2020 10:21 PM IST