ہوم » نیوز » وطن نامہ

مہاراشٹرمیں مہا ڈرامہ: سپریم کورٹ میں سماعت آج ،پارلیمنٹ میں بھی ہنگامہ متوقع

شیوسینا کے 56، کانگریس کے 44 اور این سی پی کے 50 ارکان اسمبلی نے بھی ایک حلف نامہ سپریم کورٹ میں داخل کرنے کا فیصلہ کیاہے۔

  • Share this:
مہاراشٹرمیں مہا ڈرامہ: سپریم کورٹ میں سماعت آج ،پارلیمنٹ میں بھی ہنگامہ متوقع
مہاراشٹرمیں مہا ڈرامہ: سپریم کورٹ میں سماعت آج ،پارلیمنٹ ہنگامہ متوقع

سپریم کورٹ آج شیوسینا، این سی پی اور کانگریس کی عرضی پرآج سماعت کرے گا۔ عدالت نے دیویندرفڑنویس کا لیٹرآف سپورٹ اورحکومت سازی کی دعوت دیتے ہوئے گورنر کی جانب سے لکھئے گئے خط کوعدالت میں پیش کرنے کی ہدایت دی ہے۔عدالت ان دونوں کی خطوط کا جائزہ لینے کے بعد فیصلہ سنائے گی۔وہیں دوسری جانب یہ بھی اطلاعات ہے کہ شیوسینا کے 56، کانگریس کے 44 اور این سی پی کے 50 ارکان اسمبلی نے بھی ایک حلف نامہ سپریم کورٹ میں داخل کرنے کا فیصلہ کیاہے۔اس حلف نامہ پر150 ارکان اسمبلی نے شیوسینا، کانگریس اور این سی پی کے اتحاد کی حمایت کرنے کی بات کہی ہے۔یادرہے کہ مہاوکاس اگھاڑی کی جانب سے فڑنویس حکومت کو فوری طور پر اکثریت ثابت کرنے کا حکم دینے کی درخواست کی ہے۔


 


مہاراشٹرمیں بی جے پی کی حکومت سازی پر سپریم کورٹ میں سماعت  





مہاراشٹرکے حالات پر پارلیمنٹ میں ہنگامہ متوقع

مہاراشٹرمیں گزشتہ دنوں کو کچھ ہوا۔اس کی گونج آج پارلیمنٹ میں سنائی دے گی۔ اپوزیشن جماعتیں پورے معاملے پرچراغ پا ہیں اورپارلیمنٹ میں آج ہنگامہ ہونا طئے ہے۔شیوسینا، این سی پی اورکانگریس نے مہاراشٹر میں فڑنویس کی حلف برداری کو چیلنج کیا ہے۔ کانگریس نے بی جے پی پرالزام لگایا ہے کہ اس نے چوری چھپے حکومت بنا کرآئین کی دھجیاں اڑائی ہے۔جبکہ این سی پی نے کہا تھا کہ نئی حکومت اسمبلی میں اعتماد کا ووٹ حاصل نہیں کرسکے گی۔

ارکان اسمبلی کی حفاظت پرتوجہ مرکوز

مہاراشٹرمیں بازی پلٹنے کے بعد،این سی پی،کانگریس اورشیو سینا اپنے اپنے ارکان اسمبلی کی حفاظت کرنے میں جٹی ہیں۔ این سی پی نے اپنے ارکان اسمبلی کوگرینڈ حیات، کانگریس نے جے ڈبلیو میریٹ اورشیوسینا نے اپنے ارکان اسمبلی کو للت ہوٹل میں رکھا ہے۔این سی پی کے ارکان اسمبلی پہلے رینیساں ہوٹل میں تھے لیکن بیتی رات انہیں حیات ہوٹل میں منتقل کیا گیا۔

ایئرپورٹ پرلی گئی تصویر میں این سی اپی کے دو ارکان اسمبلی دیکھے جاسکتے ہیں ۔(تصویر:نیوز18)۔
ایئرپورٹ پرلی گئی تصویر میں این سی اپی کے دو ارکان اسمبلی دیکھے جاسکتے ہیں ۔(تصویر:نیوز18)۔


سامنا میں بی جے پی اوراجیت پوار پرتنقید

مہاراشٹر کے سیاسی اتھل پتھل پر شیوسینا نے اپنے ترجمان سامنا میں بی جے پی اور اجیت پوار کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔اداریے کے مطابق بی جے پی اقتدار حاصل کرنے کے لیے کسی بھی حد تک جاسکتی ہے۔اس نے اصول اور اخلاق کوطاق پررکھ دیا ہے۔سامنا کے مطابق ریاست میں موجودہ سیاسی عدم استحکام بی جے پی کی وجہ سے ہے۔ وہ رات کے اندھیرے میں شاھر چور کی طرح جُرم کررہی ہے۔ سامنا میں اجیت پوارپربھی سخت تنقید کی گئی ہے۔ رات کے اندھیرے میں جو کچھ ہواہے اس سے بی جے پی کی تھو تھو ہورہی ہے۔ یہ لڈّوں ہضم نہیں ہوگا۔

 
First published: Nov 25, 2019 08:55 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading