ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بڑی خبر: پرشانت بھوشن توہین عدالت معاملے میں قصور وار قرار، سزا پر فیصلہ 20 اگست کو

عدالت عظمیٰ کے تئیں مبینہ طور پر توہین عدالت کے دو ٹوئٹ کرنے کے معاملے میں سپریم کورٹ کے سینئر وکیل پرشانت بھوشن کو قصور وار قرار دیا گیا ہے۔ سزا کا فیصلہ 20 اگست کو کیا جائے گا۔

  • Share this:
بڑی خبر: پرشانت بھوشن توہین عدالت معاملے میں قصور وار قرار، سزا پر فیصلہ 20 اگست کو
بڑی خبر: پرشانت بھوشن توہین عدالت معاملے میں قصور وار قرار

نئی دہلی: سپریم کورٹ (Supreme Court) کے تئیں مبینہ طور پر توہین عدالت کے دو ٹوئٹ کرنے کے معاملے میں سینئر وکیل پرشانت بھوشن (Prashant Bhushan) کو قصور وارقرار دیا گیا ہے۔ سپریم کورٹ اب 20 اگست کو سزا پر فیصلہ سنائے گی۔ واضح رہے کہ پرشانت بھوشن نے چیف جسٹس بوبڈے اور سپریم کورٹ کے 4 سابق چیف جسٹس کو لے کر قابل توہین تبصرہ کیا تھا، جس پر عدالت نے از خود نوٹس لیتے ہوئے ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی شروع کی تھی۔


سپریم کورٹ کے تئیں مبینہ طور پر توہین عدالت کے دو ٹوئٹ کرنے کے معاملے میں سینئر وکیل پرشانت بھوشن کو قصور وارقرار دیا گیا ہے۔
سپریم کورٹ کے تئیں مبینہ طور پر توہین عدالت کے دو ٹوئٹ کرنے کے معاملے میں سینئر وکیل پرشانت بھوشن کو قصور وارقرار دیا گیا ہے۔


اس سے قبل سینئر وکیل پرشانت بھوشن نے اپنے ٹوئٹ کو لے کر بچاو کیا تھا، جس میں مبینہ طور پر عدالت کی توہین کی گئی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ وہ ٹوئٹ ججوں کے خلاف ان کے ذاتی طور پر اخلاق کو لے کر تھے اور وہ عدالتی امور میں رکاوٹ نہیں بنتے تھے۔ عدالت نے اس معاملے میں پرشانت بھوشن کو 22 جولائی کو وجہ بتاو نوٹس جاری کیا تھا۔


بینچ نے سماعت مکمل کرتے ہوئے 22 جولائی کے حکم کو واپس لینے کے لئے الگ سے دائر درخواست مسترد کردی تھی۔ اسی حکم کے تحت عدلیہ کی مبینہ طور پر توہین کرنے والے دو ٹوئٹ پر توہین عدالت کی کارروائی شروع کرتے ہوئے نوٹس جاری کیا گیا تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 14, 2020 11:41 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading