کشمیر پر جن پنگ کے بیان سے بھڑکی کانگریس، کہا۔ ہندوستان بھی کرے ہانگ کانگ۔ تبت کی بات

کانگریس لیڈر منیش تیواری نے مرکزی حکومت سے سوال کیا کہ کیوں نہیں، ہندوستان چین سے تبت، ہانگ کانگ کے معاملہ پر بات کرتا ہے؟

Oct 10, 2019 12:27 PM IST | Updated on: Oct 10, 2019 12:39 PM IST
کشمیر پر جن پنگ کے بیان سے بھڑکی کانگریس، کہا۔ ہندوستان بھی کرے ہانگ کانگ۔ تبت کی بات

وزیر اعظم نریندر مودی اور چین کے صدر شی جن پنگ

نئی دہلی۔ چین کے صدر شی جن پنگ نے ہندوستان دورے سے پہلے کہا کہ ان کی کشمیر کی صورت حال پر نظر ہے اور وہ جموں وکشمیر پر اقوام متحدہ کے ضوابط پر عمل کریں گے۔ جن پنگ نے یہ بات پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ بیجنگ میں ملاقات کے دوران کہی۔ جن پنگ کے اس بیان پر کانگریس نے سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ کانگریس لیڈر منیش تیواری نے مرکزی حکومت سے سوال کیا کہ کیوں نہیں، ہندوستان چین سے تبت، ہانگ کانگ کے معاملہ پر بات کرتا ہے؟

کانگریس رکن پارلیمنٹ منیش تیواری نے جمعرات کو ٹویٹ کیا ’’ اگر چین کے صدر کہہ رہے ہیں کہ ان کی نظر جموں وکشمیر پر ہے تو وزیر اعظم مودی اور وزارت خارجہ کی طرف سے یہ کیوں نہیں کہا جاتا کہ ہندوستان ہانگ کانگ میں جمہوریت کو لے کر ہو رہے احتجاج کو دیکھ رہا ہے۔ شنجیانگ میں ہو رہی حقوق انسانی کی خلاف ورزی، تبت اور ساؤتھ چائنا سی میں چین کی مداخلت پر ہندوستان نظر بنائے ہوئے ہے۔

اس سے پہلے منگل کے روز چین نے عمران خان کو کشمیر معاملہ پر جھٹکا دیا تھا۔ عمران خان کی صدر شی جن پنگ سے ملاقات سے پہلے بیجنگ نے کہا کہ کشمیر مسئلہ کا حل ہندوستان اور پاکستان کو باہمی بات چیت سے نکالنا ہو گا۔ چین نے اقوام متحدہ اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے قراردادوں کے اپنے حالیہ حوالوں کو چھوڑتے ہوئے یہ بات کہی۔ حالانکہ، بدھ کو جن پنگ نے ایک بار پھر پاکستان کے حق میں پلٹی ماری۔

Loading...