ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شادی شدہ زندگی سے سیکس غائب، جنسی سکون کے لئے پورن اور مشت زنی کا لینا پڑتا ہے سہارا

ایک طرح سے میری شادی شدہ زندگی سے سیکس غائب ہوگیا ہے اورگزشتہ 4-3 سالوں میں ہمارے درمیان کوئی جنسی تعلقات نہیں رہا ہے۔ ہاں، ہم ایک دوسرے کو چومتے اور گلے ضرور لگاتے ہیں۔ ہم ایک دوسرے کو بے انتہا پیارکرتے ہیں، لیکن ہماری جنسی زندگی سرگرم نہیں ہے۔

  • Share this:
شادی شدہ زندگی سے سیکس غائب، جنسی سکون کے لئے پورن اور مشت زنی کا لینا پڑتا ہے سہارا
شادی شدہ زندگی سے سیکس غائب، جنسی سکون کے لئے پورن اور مشت زنی کا لینا پڑتا ہے سہارا

سوال: ایک طرح سے میری شادی شدہ زندگی سے سیکس غائب ہوگیا ہے اورگزشتہ 4-3 سالوں میں ہمارے درمیان کوئی جنسی تعلقات نہیں رہا ہے۔ ہاں، ہم ایک دوسرے کو چومتے اور گلے ضرور لگاتے ہیں۔ ہم ایک دوسرے کو بے انتہا پیارکرتے ہیں، لیکن ہماری جنسی زندگی سرگرم نہیں ہے اور آخر میں جب ہم نے بچہ پیدا کرنے کا فیصلہ لیا تو ہمارے درمیان جنسی تعلقات بنا، لیکن یہ حمل ٹھہرنے کے لئے تھا نہ کہ جنسی لطف کے لئے۔ لیکن اس میں بھی ہمیں کافی وقت لگا کیونکہ میں سست رفتار سے ہونے والے انزال سے متاثر تھا۔


اب ہمارا بیٹا تین ماہ کا ہوگیا ہے اورگزشتہ ایک سال سے میں نے اہلیہ کے ساتھ جنسی تعلقات نہیں بنایا ہے۔ میں خود کو مطمئن رکھنے کے لئے پورن کا سہارا لیتا ہوں اور مشت زنی کرتا ہوں، لیکن سیکس کی خواہش بھی ہوتی ہے۔


جواب: سیکس شادی کے لئے بے حد ضروری ہے۔ ایک طویل وقت کے ریلیشن شپ میں سیکس جسمانی اطمینان اور آرگیزم نہیں ہوکر اور بہت کچھ ہوتا ہے، حالانکہ یہ باتیں بھی اہم ہیں۔ سیکس جوڑوں کو قریب لاتا ہے، یہ جذباتی قریب پیدا کرتا ہے اور ریلیشن کو مضبوط بناتا ہے۔


ہم جنس پرستی اور یکجہتی شادیوں میں صرف سیکس ہی ایسا ہے، جو دونوں کے درمیان فرق پیدا کرتا ہے۔ سیکس ہم میں ایک دوسرے کو ڈھونڈنے کی خواہش پیدا کرتا ہے ، اور یہ ایک جھگڑے کے بعد مفاہمت کی بھی بنیاد بنتا ہے۔ ایک دباؤ بحث کے بعد ، آپ جنسی تعلقات قائم کرسکتے ہیں اور اپنے ساتھ رہنے کا قوی اشارہ دے سکتے ہیں۔

سیکس زندگی کو مستقل رکھ پانے میں ایک بڑی پریشانی لوگوں کو یہ پیش آتی ہے کہ وہ سمجھتے ہیں کہ سیکس سے پہلے اس کی خواہش ہونی چاہئے۔ ہمارا ماننا ہے کہ خواہش تیز (فلیش) شکل میں جاگتی ہے، آپ کام کر رہے ہوتے ہیں، اس درمیان آپ اپنے پارٹنر کو دیکھتے ہیں اور آپ کے دل میں سیکس کی بات آتی ہے۔ آپ جوش سے لبریز ہوتے ہیں، آپ کے جسم میں فنکشنل تبدیلی آتی ہے، من میں ٹیس اٹھتی ہے اور آپ میں سیکس کی خواہش جاگ جاتی ہے۔ اسے فوری جنسی خواہش کو کہتے ہیں، لیکن ہر شخص کے ساتھ ایسا نہیں ہوتا ہے۔ میڈیا فلم اور پورن سیکس کے صرف اس ماڈل کی چرچا کرتے ہیں، جس میں جنسی سرگرمی سے پہلے خواہش کا ہونا دکھایا جاتا ہے، لیکن کئی سارے لوگوں کے لئے جنسی سرگرمی یا جسم میں جنسی بے چینی خواہش سے پہلے ہوتی ہے۔

اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ تب تک جنسی خواہش کا تجربہ نہیں کرتے، جب تک کہ سیکس پہلے کی سرگرمیون سے انہیں جوش سے لبریز نہیں کردیا جائے۔ ہم اسے رد عمل کی خواہش کہتے ہیں جو کہ غیر ارادی خواہش کے برخلاف ہے۔ اگر کسی شخص میں اس طرح کی خواہش ہوتی ہے تو یہ نہیں کہا جاسکتا ہے کہ اس میں کچھ خرابی ہے۔ ہم سب ایک دوسرے سے کافی الگ ہوتے ہیں اور اسی لئے اس کا کوئی ایک طریقہ نہیں ہوسکتا اور ہم سب جنسی خواہش کا ایک ہی طرح سے تجربہ نہیں کرسکتے۔ شاید ہوسکتا ہے کہ آپ کی اہلیہ رد عمل کی خواہش والے زمرے میں آتی ہوں۔

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 24, 2021 10:31 PM IST