ہوم » نیوز » وطن نامہ

مشت زنی کا کیا صحت پر پڑتا ہے منفی اثر ؟ ایک دن میں کتنی مرتبہ کرسکتے ہیں؟ جانئے کیا ہے ایکسپرٹ کی رائے

ماسٹربیشن عام اور صحتمند جنسی سرگرمی ہے ۔ سبھی عمر کے لوگ ماسٹربیٹ کرتے ہیں ، بچے جوش میں اپنے عضو تولیدی کو چھوتے ہیں اور اپنے جسم کے بارے میں جانکاری حاصل کرتے ہیں اور نوجوانی کے عمر میں بچے اور بالغ جنسی تسکین حاصل کرنے کیلئے ایسا کرتے ہیں ۔

  • Share this:
مشت زنی کا کیا صحت پر پڑتا ہے منفی اثر ؟ ایک دن میں کتنی مرتبہ کرسکتے ہیں؟ جانئے کیا ہے ایکسپرٹ کی رائے
مشت زنی کا کیا صحت پر پڑتا ہے منفی اثر ؟ ایک دن میں کتنی مرتبہ کرسکتے ہیں؟ جانئے کیا ہے ایکسپرٹ کی رائے

سوال : کیا ایسی کوئی بات ہے کہ ماسٹربیشن ( مشت زنی ) صبح ، دن یا رات کو ہی کرسکتے ہیں ؟ میں دن میں ایک سے زیادہ مرتبہ ماسٹربیٹ کرتا ہوں ، کیا یہ ٹھیک ہے ؟


ماسٹربیشن عام اور صحتمند جنسی سرگرمی ہے ۔ سبھی عمر کے لوگ ماسٹربیٹ کرتے ہیں ، بچے جوش میں اپنے عضو تولیدی کو چھوتے ہیں اور اپنے جسم کے بارے میں جانکاری حاصل کرتے ہیں اور نوجوانی کے عمر میں بچے اور بالغ جنسی تسکین حاصل کرنے کیلئے ایسا کرتے ہیں ۔ آپ دن میں کتنی مرتبہ کریں اور کب کریں ، اس بارے میں کچھ بھی مقرر نہیں ہے ۔ یہ الگ الگ افراد پر منحصر ہے کہ وہ دن میں کتنی مرتبہ اور کب ماسٹربیٹ کرتا ہے ۔ یہ دن میں دو سے تین مرتبہ سے لے کر ہفتہ میں ایک یا اس سے زیادہ مرتبہ ہوسکتاہے یا پھر مہینے میں ایک یا زیادہ مرتبہ ہوسکتا ہے ۔


یہ صحیح ہے کہ ماسٹربیشن کے بارے میں کئی تصورات ہیں کہ اس سے لوگوں میں بانجھ پن آتا ہے ، کیونکہ اسپرم کی کمی ہوجاتی ہے ، عضو خاص کمزور ہوجاتا ہے ، جنسی خواہشات میں کمی آجاتی ہے ، ذہنی خرابی آتی ہے اور نہ جانے کیا کیا ۔ یہ ساری باتیں بے وقوفی بھری ہیں ۔ ماسٹربیشن سے صحت کے کئی فوائد ہیں جیسے یہ جنسی مایوسی کو ختم کرتا ہے ، نیند اچھی آتی ہے ، ذہن اور دماغ کشیدگی سے پاک رہتے ہیں اور یہ عزت نفس کو بڑھانے والا ہوتا ہے ، اس لئے بے فکر ہوکر ماسٹربیٹ کریں۔


یاں ، یہ کتنی مرتبہ کریں اس بارے میں کچھ بھی طے نہیں ہے ۔ زیادہ جنسی خواہشات کا ہونا عام بات ہے ۔ کوئی شخص کتنی مرتبہ ماسٹربیٹ کرے یہ تب تک باعث پریشانی نہیں ہے ، جب تک کہ اس میں لگنے والا وقت ، اس شخص کی صحت اور متوازن زندگی کو متاثر کرنا شروع نہ کردے ۔ مثال کے طور پر اسکول جانے ، کام کرنے ، کنبہ اور سماجی پروگراموں میں شرکت کرنے پر اس کا اثر پڑنا شروع ہوجائے ۔

مان لیجئے کہ آپ اس کی وجہ سے کام پر نہیں جا پارہے ہیں ، آپ باہر نکلنا بند کردیں ، دوستوں سے ملنا جلنا بند کردیں ، اپنے کنبہ کے ساتھ وقت گزارنا بند کردیں ۔ کیونکہ آپ گھر میں بند ہوکر دن بھر ماسٹربیٹ ہی کرتے ہیں ، تب یہ پریشانی بن جاتی ہے ۔ اگر آپ اتنا ماسٹربیٹ کریں کہ یہ آپ کے عضو تولیدی میں درد کا سبب بننے لگے یا اس میں زخم ہوجائے ، کیونکہ آپ مسلسل اس کو رگڑ رہے ہیں تو یہ پریشانی پیدا کرتا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 15, 2021 10:47 PM IST