ہوم » نیوز » وطن نامہ

جسمانی تعلقات بنانے کے دوران اگر جلد ہوجاتا ہے اخراج تو ضرور اپنائیں یہ طریقہ ، آرگیزم کے حصول میں ملے گی مدد

کئی مرتبہ سیکس کے دوران اپنی کارکردگی کو لے کر فکر اور پورن دیکھ کر ماسٹربیشن کی عادت کی وجہ سے مردوں میں قبل از وقت ایجیکیولیشن کا ایک پیٹرن بن جاتا ہے ۔

  • Share this:
جسمانی تعلقات بنانے کے دوران اگر جلد ہوجاتا ہے اخراج تو ضرور اپنائیں یہ طریقہ ، آرگیزم کے حصول میں ملے گی مدد
علامتی تصویر

پانچ منٹ کے اندر ہی آرگیزم کی حالت میں آجانے کو قبل از وقت ہوئی ایجیکیولیشن ( اخراج ) مانا جائے گا؟


نہیں ، عضو خاص کو جسم کے اندر داخل کرکے ہونا والا سیکس تین سے پانچ منٹ تک ہی ہوتا ہے ، اس لئے پانچ منٹ کافی ہے ۔ سائنسی مطالعوں میں پایا گیا ہے کہ دو منٹ سے کم وقت میں یہاں تک پہنچ جانے کو قبل از وقت ایجیکیولیشن مانا جائے گا ۔ مگر میری سمجھ کے مطابق وقت سے پہلے ایجیکیولیشن کا مطالب دونوں پارٹنر کے سیکس کیلئے تیار ہونے سے پہلے ایجیکیولیٹ ہوجانا ہی وقت سے پہلے ایجیکیولیشن مانا جائے گا ، اس لئے اگر کوئی شخص تین منٹ میں ایجیکیولیٹ ہوجاتا ہے اور اس وقت تک اس کا پارٹنر تیار نہیں ہوتا ہے تو اس کو وقت سے پہلے ایجیکیولیشن کہا جائے گا ۔


کئی مرتبہ سیکس کے دوران اپنی کارکردگی کو لے کر فکر اور پورن دیکھ کر ماسٹربیشن کی عادت کی وجہ سے مردوں میں قبل از وقت ایجیکیولیشن کا ایک پیٹرن بن جاتا ہے ۔ جلدی اور ہارڈ ماسٹربیشن ( مشت زنی) کی وجہ سے پرائیویٹ پارٹ حساس ہوجاتا ہے اور یہ وقت سے پہلے ایجیکیولیشن کا سبب بن جاتا ہے ۔ طویل وقت تک اس کام میں بنے رہنے کیلئے طریقہ یہ بتایا جاسکتا ہے کہ جب آپ آرگیزم حاصل کرنا چاہتے ہوں ، تو اس تک پہنچے سے رک جائیے اور اس کو نہیں آنے دیجئے ۔


پوائنٹ آف نو ریٹرن ایک ایسا پوائنٹ ہے جب جوش ایجیکیولیشن آرگیزم میں تبدیل ہوجاتا ہے ۔ اس کی وجہ سے جسم میں کئی طرح کے رد عمل ہوتے ہیں ، جو میدان میں برفانی تودہ گرنے کی طرح ہوتا ہے ۔ اس کی وجہ سے جسم کے پیلوک علاقہ میں بھاری ہچکچاہٹ پیدا ہوتی ہے اور اس کے نتیجہ میں اسپرم نکل جاتا ہے ۔ یہ واپسی کو ناممکن بنانے والے پوائنٹ کو روکنا ہوتا ہے اور ہم آرگیزم کے طور پر اس کا تجربہ کرتے ہیں ۔ جیسا کہ ہم پہلے ہی اس بارے میں بات کرچکے ہیں ۔ زیادہ تر لوگوں کیلئے یہی آرگیزم ( لطف) ہے ۔

روکنا

اگر آرگیزم کے پوائنٹ کو پار کرنے سے برفانی تودہ گرنے جیسا احساس ہوتا ہے تو اس کو روکنے کیلئے آپ کیا کریں گے ۔ آپ اس حد کو پار نہیں کریں ۔ آپ رکیں گے ۔ رک کر اس سیکسوئل توانائی کو آپ کسی اور سمت میں جانے کی اجازت دیں ۔ آپ کے جسم میں جو سنسنی اور جذبات امنڈ رہے ہیں اس کا تجربہ کیجئے ۔ اپنے پارٹنر سے اپنی آنکھوں ، اپنی سانسوں اور کچھ بڑبڑانے اور اس کو چھو کر اپنا رابطہ بڑھائے ۔ اس کے بعد آپ اس کام کو آگے بڑھائیے جو آپ پہلے کررہے تھے ۔ یہ صحیح میں ایک ایسی تکنیک ہے جس کو کم آزمایا گیا ہے ۔ رکنے سے آپ کو لمبے وقت تک اس کام میں بنے رہنے کا موقع مل جاتا ہے اور آپ کا پارٹنر آپ کے جسم میں ہونے والی سنسنی سے واقف ہوجاتا ہے اور یہ ایک ایسا کام بن جاتا ہے جس میں ایک نہیں کئی مرتبہ آرگیزم کا لطف اٹھایا جاسکتا ہے ۔

پورے جسم میں سیکس کے تجربہ کا احساس زیادہ اہم ہے اور اس لئے اپنے اور اپنے پارٹنر کے جسم کو ایکسپلور کریں اور جسم کے اندر انٹری کو آخری وقت کیلئے بچا کر رکھیں اور اس کو ٹالتے رہیں ۔ اس سے نہ صرف بہتر آرگیزم کا تجربہ ہوگا بلکہ آپ کو سیکس کا سچا تجربہ بھی حاصل ہوگا جو کہ جسم کے اندر انٹری کرنے سے کہیں زیادہ خوشگوار ہے ۔ کئی مردوں کےساتھ پریشانی یہ ہے کہ سیکس کے بارے میں ان کے سبھی خیالات پورن اور سیکس سے متعلق روایات اور تصورات پر مبنی ہوتے ہیں اور وہ کسی خاتون کے جسم میں انٹری کو ہی سیکس سمجھتے ہیں ۔ پورے جسم میں پائے جانے والے احساسات سے لطف اندوز ہوں ۔ اس سے آپ کی زندگی اور آپ کی جنسی زندگی دونوں میں بہتری آئے گی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 02, 2021 03:14 PM IST