صحافی کاالزام، پولیس نےحوالات میں بری طرح پیٹا، میرے اوپر کیا پیشاب

شاملی کے اس معاملے پر ریاست کے ڈی جی پی اوپی سنگھ نے ایکشن لیتے ہوئے جی آرپی انسپیکٹر راکیش کمار اور سپاہی سنیل کمار کوفوری طور پرسسپینڈ کردیاہے۔

Jun 12, 2019 01:48 PM IST | Updated on: Jun 12, 2019 01:48 PM IST
صحافی کاالزام، پولیس نےحوالات میں بری طرح پیٹا، میرے اوپر کیا پیشاب

یوپی کے شاملی میں ایک ٹرین ڈی ریل کے واقعے کو خبر کرنے گئے ایک نیوز چینل کے صحافی امت شرما کی جی آڑپی ایس او راکیش کمار اور دیگر کے ذریعے بری طرح مارپیٹ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ صحافی کا الزام ہے کہ ایس او راکیش کمار اس سے اس لئے خفا ھے کیونکہ انہوں نے کچھ دن پہلے ٹرین میں جی آرپی کے ذریعے جارہے غیر قانونی وینڈروں کے کھیل کا انکشاف کیا تھا۔

نیوز 18 سے بات چیت میں متاثر صحافی امت شرما نے کہا،  ' پورا  واقعہ  کچھ  دن  پہلے  شروع  ہوا  جب  میں  نے  ایک  رپورٹ  چلائی۔ اس رپورٹ میں شاملی جی آرپی کے ذریعے اسٹیشن اور ٹرینوں میں غیر قانونی وینڈروں کا کھیل چل رہا تھا۔ ٹی وی پر رپورٹ دکھائے جانے کے بعد سے ہی راکیش کمار و دیگر لوگ مجھ سے خفاتھے۔ کل منگل کوجب میں ٹرین ڈی ریل کے واقعہ کو کور کرنے گیا تو وہاں جی آرپی ایس او راکیش کمار اور ان کے ساتھی موجود تھے۔

انہوں نے مجھے دیکھتے ہی مجھ پر حملہ کردیا۔ میرے کیمرے توڑ دئے۔ میرے تینوں فون چھین لئے، مجھے گالی دی اور مارتے ہوئے لاک اپ میں ڈال دیا۔ ان لوگوں نے مجھ سے میری رپورٹ کا بدلہ لیا۔ میں چاہتا ہوں کہ قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی ہو'َ۔

بتادیں کہ اس واقعے کا ویڈیوبھی سامنے آیا ہے جس میں نظر آرہا ہے کہ بے بس صحافی گڑگڑاتا رہا اور اپنی جان کی بھیک مانگتا رہا لیکن ایس او راکیش کمار اور ان کے ساتھیوں نے اسے حوالات میں ڈال دیا۔۔

Loading...

شاملی کے اس معاملے پر ریاست کے ڈی جی پی اوپی سنگھ نے ایکشن لیتے ہوئے جی آرپی انسپیکٹر راکیش کمار اور سپاہی سنیل کمار کوفوری طور پرسسپینڈ کردیاہے۔ ساتھ ہی ڈی جی پی نے ایس پی جی آرپی مرادآباد کو موقع پر پہنچنے کی ہدایت دیتے ہوئے 24 گھنٹے میں رپورٹ طلب کی ہے۔ ایس پی جی آرپی کی رپورٹ پر آگے کی کارروائی طے ہوگی۔ انہوں نے اے ڈی جی ریولے پر نظر بنائے رکھنے کو کہا ہے۔۔

Loading...