ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے اراکین پارلیمنٹ کو معطل کئے جانے کے خلاف شرد پوار نےکیا ایک روزہ بھوک ہڑتال اعلان

راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے 8 ممبران اسمبلی کو پارلیمنٹ کے بقیہ اجلاس تک معطل کرنے کے معاملے پر ان کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے راشٹر وادی کانگریس (این سی پی) کے صدر شرد پوار نے کہا کہ وہ ان کی تحریک میں حصہ لیں گے اور ان کی حمایت میں ایک روزہ بھوک ہڑتال کریں گے۔

  • Share this:
راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے اراکین پارلیمنٹ کو معطل کئے جانے کے خلاف شرد پوار نےکیا ایک روزہ بھوک ہڑتال اعلان
راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے اراکین پارلیمنٹ کو معطل کئے جانے کے خلاف شرد پوار نےکیا ایک روزہ بھوک ہڑتال اعلان

ممبئی: راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے 8 ممبران اسمبلی کو پارلیمنٹ کے بقیہ اجلاس تک معطل کرنے کے معاملے پر ان کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے راشٹر وادی کانگریس (این سی پی) کے صدر شرد پوار نے کہا کہ وہ ان کی تحریک میں حصہ لیں گے اور ان کی حمایت میں ایک روزہ بھوک ہڑتال کریں گے۔ واضح رہے کہ مرکز نے تین نئے بل، ضروری اجناس کی خدمات کی اصلاحات ایکٹ، مارکیٹ کمیٹی ڈریگولیشن بل اور معاہدہ زراعت بل پیش کیا ہے۔ وزیر زراعت نریندر سنگھ تومر نے پیر کو لوک سبھا میں بل پیش کرتے ہوئےکہا، "ان قوانین سے کسانوں کو فائدہ ہوگا۔" تاہم ان زرعی بلوں پر کسانوں نے مرکزی حکومت کے خلاف سڑکوں پر آنا شروع کردیا ہے۔ اپوزیشن جماعتوں نے اس بل پر سخت تنقید کی ہے، اسے"کسان مخالف" قرار دیتے ہیں اور اس کے خلاف پنجاب اور ہریانہ میں احتجاج کر رہے ہیں۔ اسی پس منظر میں، این سی پی صدر شرد پوار نے آج ممبئی میں پریس کانفرنس کی اور مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا۔

شرد پوار نے کہا کہ راجیہ سبھا میں زرعی بل آنا تھا، اس پر بحث کی توقع کی جا رہی تھی، لیکن حکومت نے جلدی میں بل منظور کرلئے۔ اس بل پر ممبران کے سوالات تھے، بحث پر اصرار کیا گیا تھا، لیکن اس اصرار کو ایک طرف رکھ دیا گیا اور ایسا لگتا تھا کہ ایوان کا کام آگے بڑھایا گیا ہے۔ شرد پوار نے راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے 8 ممبران اسمبلی کو پارلیمنٹ کے بقیہ اجلاس تک معطل کرنے کے معاملے پر بھی تبصرہ کیا ہے۔ راجیہ سبھا ممبروں کو معطل اور ان کے حقوق ختم کردیئے گئے۔ تمام ممبران نے اپنے غم کے اظہار کے لئے کل شام سے بھوک ہڑتال کی۔


مرکز نے تین نئے بل، ضروری اجناس کی خدمات کی اصلاحات ایکٹ، مارکیٹ کمیٹی ڈریگولیشن بل اور معاہدہ زراعت بل پیش کیا ہے۔
مرکز نے تین نئے بل، ضروری اجناس کی خدمات کی اصلاحات ایکٹ، مارکیٹ کمیٹی ڈریگولیشن بل اور معاہدہ زراعت بل پیش کیا ہے۔


سابق مرکزی وزیر اور این سی پی سربراہ شرد پوار نے کہا کہ انہوں نے ایوان کے باہر اپنے جذبات کا اظہار کیا ہے۔ حیرت کی بات یہ ہے کہ ممبران کے حقوق سے انکار کیا گیا اور بھوک ہڑتال کر رہے ارکان کو چائے دینے کی کوشش کی گئی۔ پتہ چلا کہ ممبروں نے چائے کو ہاتھ نہیں لگایا۔ آج ممبران نے کھانے سے پرہیزکرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ لہٰذا میں آج بھوک ہڑتال پر جا رہا ہوں۔ شرد پوار نے واضح کیا ہے کہ میں مدھیہ پردیش کی انتخابی مہم میں بھی حصہ لوں گا۔" میں ان کی (8 معطل راجیہ سبھا ممبران اسمبلی) کی تحریک میں بھی حصہ لوں گا۔ میں حمایت ظاہر کرنے کے لئے ایک دن کا روزہ رکھوں گا"۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 22, 2020 10:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading