پاکستان نے سربیا میں اٹھایا کشمیر کا معاملہ تو ششی تھرور نے لگادی جم کر کلاس ، دیا یہ جواب

کانگریس کے سینئر لیڈر ششی تھرور نے ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کی میٹنگ میں غیر ضروری طریقہ سے کشمیر کا تذکرہ کرنے کیلئے پاکستان کو جم کر آڑے ہاتھوں لیا ہے ۔

Oct 13, 2019 11:01 PM IST | Updated on: Oct 13, 2019 11:01 PM IST
پاکستان نے سربیا میں اٹھایا کشمیر کا معاملہ تو ششی تھرور نے لگادی جم کر کلاس ، دیا یہ جواب

پاکستان نے سربیا میں اٹھایا کشمیر کا معاملہ تو ششی تھرور نے لگادی جم کر کلاس ، دیا یہ جواب

کانگریس کے سینئر لیڈر ششی تھرور نے ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کی میٹنگ میں غیر ضروری طریقہ سے کشمیر کا تذکرہ کرنے کیلئے پاکستان کو جم کر آڑے ہاتھوں لیا ہے ۔ اس اسمبلی کا انعقاد سربیا کی راجدھانی بلیگریڈ میں کیا گیا تھا ۔ پاکستان نے کہا تھا کہ وہ اس میٹنگ کا انعقاد اپنے یہاں نہیں کرواسکتا ہے ۔ اس بعد پاکستان نے ایسا نہ کرپانے کیلئے جو وجہ بیان کی وہ کافی مضحکہ خیز تھی ۔

پاکستان نے کہا کہ وہ ایسا کشمیر کے موجودہ حالات کے پیش نظر نہیں کرسکے گا ۔ جس پر تھرور نے پاکستان کو آڑے ہاتھوں لیا اور پاکستان کے بیان کو بہانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کے داخلی معاملات کا حوالہ دے کر پاکستان اس اسٹیج کا سیاسی استعمال کرنے کی کوشش کررہا ہے ۔

Loading...

ذرائع نے بتایا کہ انٹر پارلیمنٹری یونین کی سالانہ میٹنگ کے الگ ایشیائی پارلیمانی اسمبلی میں تھرور نے پاکستانی سینیٹ کے چیئرمین کے ایک خط کی مذمت کی ، جس میں انہوں نے پاکستان کے ذریعہ دسمبر 2019 میں طے شدہ اے پی اے مکمل اجلاس کی میزبانی کرنے سے معذرت کیلئے جموں و کشمیر کے حالات کو ذمہ دار بتایا ہے ۔

ششی تھرور نے پاکستان کی سینیٹ کے چیئرمین پر نشانہ سادھتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ہندوستان کے داخلی معاملات کا حوالہ غیر ضروری طور پر اجلاس کے سیاسی استعمال کیلئے دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے ۔ جموں و کشمیر کی صورتحال میں ایسا کچھ بھی نہیں ہے جو کسی بھی طور پر ان کے ملک میں رہنے اور کام کرنے کو متاثر کرے ۔ اسلام آباد کی تو بات ہی چھوڑ دیجئے ۔

ششی تھرور نے مزید کہا کہ ہندوستان کے داخلی معاملات اس کی سرحد کے باہر نہیں جاتے ہیں اور پڑوسیوں کو متاثر نہیں کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس صورتحال میں یہ حیران کن ہے کہ وہ یہ امید کرتے ہیں کہ یہ اجلاس دسمبر 2019 میں اے پی اے کے مکمل اجلاس کی میزبانی کرنے کی عدم خواہش کے اظہار کیلئے اس طرح کے بہانوں کو قبول کرے گا ۔

Loading...