ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کرناٹک کی شیعہ مسجدوں میں ابھی نماز با جماعت کا نظم نہیں، لوگ انفرادی طور پر پڑھ رہے ہیں نمازیں

کرناٹک میں شیعہ مسجدیں بھی مصلیوں کیلئے کھولی ہوئی ہیں، لیکن یہاں باجماعت نماز ادا کرنے کا سلسلہ ابھی شروع نہیں ہوا ہے۔ لوگ سماجی فاصلے کے تحت انفرادی طور پر نمازیں ادا کر رہے ہیں۔

  • Share this:
کرناٹک کی شیعہ مسجدوں میں ابھی نماز با جماعت کا نظم نہیں، لوگ انفرادی طور پر پڑھ رہے ہیں نمازیں
کرناٹک کی شیعہ مسجدوں میں ابھی نماز با جماعت کا نظم نہیں

کرناٹک میں 8 جون سے تمام مذاہب کی عبادت گاہیں عوام کیلئے کھلی ہوئی ہیں۔ ریاست کی تقریبا تمام مسجدوں میں سماجی فاصلے اور دیگر  احتیاطی تدابیر کے ساتھ نمازوں کی ادائیگی کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔ سنی مسجدوں میں مصلیان باجماعت فرض نمازیں ادا کررہے ہیں۔ لیکن  ریاست کی شیعہ مسجد میں صورتحال کچھ مختلف ہے۔ شیعہ مسجدیں بھی مصلیوں کیلئے کھولی ہوئی ہیں لیکن یہاں باجماعت نماز ادا کرنے کا سلسلہ ابھی شروع نہیں ہوا ہے۔ لوگ سماجی فاصلے کے تحت انفرادی طور پر نمازیں ادا کررہے ہیں۔


بنگلورو میں انجمن امامیہ کے صدر میر علی رضا نجفی نے کہا کہ کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی کی سرپرستی میں لئے گئے فیصلوں کی تمام شیعہ مسلمان تائید کرتے ہیں، حکومت سے منظوری ملنے کے اہل تشیع کی مسجدوں میں بھی نمازوں کی ادائیگی کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔ لیکن ابھی باجماعت نمازیں ادا نہیں کی جارہی ہیں۔ پچھلے جمعہ کے موقع پر بھی لوگوں نے انفرادی طور پر ظہر کی نماز ادا کی ہے۔


کرناٹک میں سنی مسجدوں میں مصلیان باجماعت فرض نمازیں ادا کر رہے ہیں، لیکن  ریاست کی شیعہ مسجد میں صورتحال کچھ مختلف ہے۔
کرناٹک میں سنی مسجدوں میں مصلیان باجماعت فرض نمازیں ادا کر رہے ہیں، لیکن  ریاست کی شیعہ مسجد میں صورتحال کچھ مختلف ہے۔


میر علی رضا نجفی نے کہا کہ انفرادی طور ادا کی جارہی نمازوں میں سماجی فاصلے کا مکمل خیال رکھا گیا ہے۔ سنیٹائزر کا استعمال اور دیگر احتیاطی تدابیر مسجدوں میں  اختیار کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بنگلورو سمیت کرناٹک کے مختلف شہروں میں اہل تشیع کی تقریبا 40 مساجد ہیں۔ مساجد کے ساتھ تعداد میں عبادت خانہ بھی موجود ہیں تمام مسجدوں اور عبادت گاہوں میں لوگ انفرادی طور پر نمازیں ادا کر رہے ہیں۔

 بنگلورو کے قریب واقع علی پور کی انجمن جعفریہ نے بھی مسجدوں میں جماعت کے ساتھ نماز کے بجائے انفرادی حیثیت سے نمازوں کی ادائیگی کیلئے مصلیوں کو اجازت دی ہے۔

بنگلورو کے قریب واقع علی پور کی انجمن جعفریہ نے بھی مسجدوں میں جماعت کے ساتھ نماز کے بجائے انفرادی حیثیت سے نمازوں کی ادائیگی کیلئے مصلیوں کو اجازت دی ہے۔


بنگلورو کے قریب واقع علی پور کی انجمن جعفریہ نے بھی مسجدوں میں جماعت کے ساتھ نماز کے بجائے انفرادی حیثیت سے نمازوں کی ادائیگی کیلئے مصلیوں کو اجازت دی ہے۔ کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر کرناٹک کی تمام مساجد میں سماجی فاصلے، مصلیوں کیلئے ماسک کو لازمی قرار دیا گیا ہے۔ گھروں سے ہی وضو بنا کر مسجدوں میں آنے اور مسجدوں میں زیادہ وقت نہ گزارنے کی اپیل کی گئی ہے۔
First published: Jun 13, 2020 11:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading