ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہماچل بجٹ سیشن: گورنر سے بدسلوکی اور ہنگامہ، اپوزیشن لیڈر سمیت 5 کانگریسی اراکین اسمبلی پورے سیشن کے لئے معطل

ہماچل پردیش اسمبلی (Himachal Assembly) کے بجٹ سیشن (Budget Session) کے پہلے دن کا ہنگامے کے ساتھ آغاز ہوا ہے۔ ایوان کی کارروائی محض 10 منٹ کے بعد ہی روکنی پڑی۔ کانگریس (Congress) نےگورنر کے خطاب کے دوران خوب ہنگامہ کیا اور اس وجہ سے گورنر خطاب درمیان میں ہی چھوڑ کر گورنر بنڈارو دتوترے نکل گئے۔

  • Share this:
ہماچل بجٹ سیشن: گورنر سے بدسلوکی اور ہنگامہ، اپوزیشن لیڈر سمیت 5 کانگریسی اراکین اسمبلی پورے سیشن کے لئے معطل
ہماچل بجٹ سیشن: گورنر سے بدسلوکی اور ہنگامہ، اپوزیشن لیڈر سمیت 5 کانگریسی اراکین اسمبلی پورے سیشن کے لئے معطل

شملہ: ہماچل پردیش اسمبلی (Himachal Assembly) کے بجٹ سیشن (Budget Session) کے پہلے دن کا ہنگامے کے ساتھ آغاز ہوا ہے۔ ایوان کی کارروائی محض 10 منٹ کے بعد ہی روکنی پڑی۔ کانگریس (Congress) نےگورنر کے خطاب کے دوران خوب ہنگامہ کیا اور اس وجہ سے گورنر خطاب درمیان میں ہی چھوڑ کر گورنر بنڈارو دتوترے نکل گئے۔ اس پر کانگریس ناراض ہوگئی اور ایوان کے بعد ان کی گاڑی روک دی اور گھیراو کیا۔ اس دوران مارشل پولیس اور کانگریس اراکین اسمبلی میں جم کر دھکا مکی ہوئی۔ اس دوران وزیر سریش بھاردواج نیچے گرگئے۔ اب کانگریس کے 5 اراکین اسمبلی کو پورے سیشن کے لئے معطل کردیا گیا ہے۔


وہیں، ڈپٹی اسپیکر بھی کانگریس اراکین اسمبلی کو دھکا دیتےہوئے نظر آئے۔ بعد میں گورنر کسی طرح سے وہاں سے نکلے اور کارروائی دوبارہ شروع ہوئی۔ حالانکہ، اپوزیشن کے اراکین اسمبلی ایوان میں نہیں لوٹے۔ ایوان میں کانگریس کے اپوزیشن لیڈر سمیت 5 اراکین اسمبلی کو سیشن سے معطل کرنے کے لئے تجویز لائی گئی اور اس پر بحث کی گئی۔


اسپیکر نے کی مذمت


اسمبلی اسپیکر وپن پرمار نے حادثہ کی مذمت کی۔ ساتھ ہی پارلیمانی امور کے وزیر سریش بھاردواج نے ایوان میں کہا، ’کانگریس نے ایوان ہی نہیں، آئین کے اوپر حملہ کیا ہے اور کانگریسیوں پر سخت کارروائی کی جانی چاہئے‘۔ انہوں نے کہا کہ گورنر کے بجٹ خطاب پر بحث کے لئے 4 دن کا وقت دیا تھا۔ گورنر کا راستہ روکنا شرمناک ہے۔ وزیرا علیٰ کا راستہ روکتے، وزرا کا راستہ روکتے، یہ گورنر کا ایک طرح سے فزیکل اسالٹ (جسمانی حملہ) کیا گیا ہے۔

یہ ہوئے معطل

اس کے بعد سریش بھاردواج نے ایوان میں تجویز رکھی اور کہا کہ اپوزیشن لیڈر سمیت 5 اراکین اسمبلی کو معطل کیا جائے گا۔ اپوزیشن لیڈر مکیش اگنی ہوتری، رکن اسمبلی ہرش وردھن، ستیہ پال رائے زادہ، ونے کمار، سندر سنگھ ٹھاکر کو معطل کرنے کی تجویز پر اسمبلی کے ضوابط -319 کے تحت ایوان میں بحث کے لئے لایا گیا تھا اور منظور کردیا گیا۔ سریش بھاردواج نے کہا کہ گورنر کے اے ڈی سی کے گلے پر ہاتھ ڈالا گیا۔ وزیر جنگلات راکیش پٹھانیا، نریندر براگٹا، گوبند ٹھاکر، وزیر راجندر گرگ نے تجویز کی حمایت کی تھی۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 26, 2021 04:31 PM IST