سنجے راؤت کا بی جے پی پربڑا حملہ- مہاراشٹر تکبر اورمنافقت کو برداشت نہیں کرتا

 شیوسینا نے بی جے پی پرتنقید کرتے ہوئےکہا کہ چھترپتی شیواجی مہاراج 'کسی ایک مذہب، ذات یا پارٹی تک محدود نہیں' ہیں۔ بلکہ وہ مہاراشٹر کے11 کروڑ لوگوں کے ہیں۔

Nov 17, 2019 03:31 PM IST | Updated on: Nov 17, 2019 05:09 PM IST
سنجے راؤت کا بی جے پی پربڑا حملہ- مہاراشٹر تکبر اورمنافقت کو برداشت نہیں کرتا

شیوسینا لیڈر سنجے راؤت نے'سامنا' میں اپنے کالم میں بی جے پی پر تنقید کی ہے۔

ممبئی: شیوسینا نے بی جے پی پرتنقید کرتے ہوئے اتوارکوکہا کہ چھترپتی شیواجی مہاراج 'کسی ایک مذہب، ذات یا پارٹی تک محدود نہیں' ہیں۔ بلکہ وہ مہاراشٹر کے 11 کروڑلوگوں کے ہیں۔ شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ سنجے راؤت نے پارٹی کے اخبار 'سامنا' میں اپنے ہفتہ واری کالم میں کہا 'چھترپتی شیواجی کسی ایک ذات یا مذہب تک محدود نہیں ہیں۔ وہ مہاراشٹرکے 11 کروڑلوگوں سے منسلک ہیں'۔

سنجے راؤت نے مراٹھا سلطنت کے بانی شیواجی پرمرکوزانتخابی مہم کے لئے بی جے پی کوآڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا 'بی جے پی یہ تشہیرکررہی ہے کہ وہی ایک واحد ایسی پارٹی ہے، جسے شیواجی مہاراج کا آشیرواد (نیک خواہشات) حاصل ہے۔ اس کے باوجود بی جے پی امیدواراودین راجے بھوسلے ساتارا لوک سبھا ضمنی الیکشن ہارگئے'۔

Loading...

این سی پی چھوڑکربی جے پی میں ہوئے تھے شامل

چھترپتی شیواجی کے وارث اودین راجےبھوسلے نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) چھوڑکر بی جے پی میں شامل ہوگئے تھے اور21 اکتوبرکوریاستی اسمبلی انتخابات کے ساتھ ہوئے لوک سبھا ضمنی انتخابات میں انہیں این سی پی کے شری نواس پاٹل کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ سنجے راؤت نےکہا 'شیواجی مہاراج نے ہمیں سکھایا کہ مہاراشٹرتکبر اورمنافقت کوبرداشت نہیں کرتا۔ جب لوگ شیواجی مہاراج کے نام پرحلف لیتے ہیں، لیکن اپنے وعدے پورے نہیں کرتے اورخود کوریاست کے حکمراں کے طورپردیکھنےلگتے ہیں تویہ ان کے زوال کا اشارہ ہے'۔ انہوں نےکہا کہ بی جے پی نے عرب ممالک میں شیواجی میموریل پرکام شروع بھی نہیں کیا ہے جبکہ پڑوسی گجرات میں اس کی حکومت نے سردار پٹیل کی تعمیرپوری کرلی ہے۔

Loading...