اپنا ضلع منتخب کریں۔

    شردھا قتل کیس: آفتاب نے میدان گڑھی کے تالاب میں پھینکا تھا سر! پولیس نے کرایا خالی

    Youtube Video

    شردھا قتل کیس میں ایک نیا اپڈیٹ یہ ہے کہ دہلی پولیس میونسپل کارپوریشن کے ملازمین کے ساتھ ایک تالاب کو خالی کر رہی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ آفتاب نے شردھا کا سر اسی تالاب میں پھینک دیا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Chattar Pur
    • Share this:
      نئی دہلی: پولیس شردھا والکر قتل کیس کی تحقیقات میں مسلسل مصروف ہے۔ آفتاب پونا والا نے شردھا کو قتل کرنے کے بعد اس کی لاش کے 35 ٹکڑے کر دیے تھے اور اس کے جسم کے ایک ایک حصے کو مختلف مقامات پر پھینکنے میں مصروف تھا۔ وہ اب پولیس کی تحویل میں ہے اور پولیس لاش کے ٹکڑے اور واقعے سے متعلق چیزوں کو برآمد کرنے میں مصروف ہے۔ اس درمیان شردھا قتل کیس میں ایک  نیا اپڈیٹ یہ ہے کہ دہلی پولیس میونسپل کارپوریشن کے ملازمین کے ساتھ ایک تالاب کو خالی کر رہی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ آفتاب نے شردھا کا سر اسی تالاب میں پھینک دیا تھا۔

      دہلی پولیس شردھا قتل کیس کے ملزم آفتاب پونا والا سے مسلسل پوچھ گچھ کر رہی ہے اور اس کی جگہ پر کئی جگہوں پر تلاشی آپریشن کر رہی ہے۔ اس کے ساتھ ہی اتوار کو دہلی پولیس نے میونسپل کارپوریشن کی ٹیم سے رابطہ کرکے تالاب کو خالی کرایا۔ دہلی جنوبی ضلع کے میدان گڑھی علاقے میں میونسپل کارپوریشن کے ملازمین کے ساتھ مل کر ایک تالاب کو خالی کر دیا گیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ شردھا والکر کا سر اس تالاب میں پھینکا گیا تھا۔ تالاب کو خالی کرنے کے بعد یہاں سے جسم کا حصہ تلاش کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ وہاں موجود آر ڈبلیو اے کے صدر نے بتایا کہ پولیس یہاں پہنچ گئی ہے یہ تالاب ڈھائی ایکڑ پر پھیلا ہوا ہے۔

      پورے ملک کی نظریں شردھا قتل کیس پر لگی ہوئی ہیں۔ اس حوالے سے پولیس پوری طرح اپنی تحقیقات میں مصروف ہے۔ ایک دن پہلے دہلی پولیس کے ذرائع سے موصول ہونے والی معلومات کے مطابق، مہرولی میں ملزم آفتاب امین پونا والا کے کرائے کے مکان کے قریب نصب سی سی ٹی وی کی کچھ فوٹیج برآمد ہوئی ہے جس کی تاریخ 18 اکتوبر ہے۔ ان سی سی ٹی وی فوٹیج میں آفتاب اپنے ہاتھ میں کچھ سامان لے کر تین بار گھر سے نکلتا ہوا نظر آ رہا ہے۔

      ذرائع کے مطابق جب پولیس نے ان سے اس بارے میں پوچھ گچھ کی تو آفتاب نے بتایا کہ اس نے 18 اکتوبر کو ہی فریج میں رکھی شردھا کی لاش کے کچھ ٹکڑے پھینکے تھے۔ پولیس کے سامنے آفتاب کے بیان کے مطابق شردھا کو قتل کرنے کے بعد اس کی لاش کے 35 ٹکڑے کر کے فریج میں رکھ دیے تھے۔ وہ آہستہ آہستہ لاش کے ٹکڑوں کو کالی پولی تھین میں ڈال کر جنگل میں پھینک دیتا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: