ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہندوستان میں کووڈ۔19کی صورتحال دل دہلانے والی ہے: ڈبلیو ایچ او چیف ٹیڈروس اڈانوم کابیان

ٹیڈروس (WHO Chief Tedros Adhanom) نے ایک بریفنگ میں بتایا کہ ’’ڈبلیو ایچ او ہر ممکن کوشش کر رہا ہے، جس میں ہم ہزاروں آکسیجن، تیار شدہ موبائل فیلڈ اسپتالوں اور لیبارٹری کی فراہمی سمیت اہم سامان اور رسد مہیا کررہے ہیں‘‘۔

  • Share this:
ہندوستان میں کووڈ۔19کی صورتحال دل دہلانے والی ہے: ڈبلیو ایچ او چیف ٹیڈروس اڈانوم کابیان
ڈبلیو ایچ او چیف ٹیڈروس اڈانوم

عالمی ادارہ صحت (World Health Organization) کے سربراہ ٹیڈروس اڈانوم گیبریئس نے کہا کہ ’’ہندوستان میں کورونا وائرس (Covid-19) صورتحال دل دہلانے والی ہے۔ اسی عالمی ادارہ صحت کورونا سے نمٹنے کے لئے اضافی عملہ اور سامان بھیج رہا ہے‘‘۔ٹیڈروس نے ایک بریفنگ میں بتایا کہ ’’ڈبلیو ایچ او ہر ممکن کوشش کر رہا ہے، جس میں ہم ہزاروں آکسیجن، تیار شدہ موبائل فیلڈ اسپتالوں اور لیبارٹری کی فراہمی سمیت اہم سامان اور رسد مہیا کررہے ہیں‘‘۔


انہوں نے کہا کہ اس نے پہلے ہی اعلان کیا ہے کہ ڈبلیو ایچ او کے عملے کے 2600 عملہ اس بیماری سے لڑنے کی کوششوں میں مدد کے لئے ہندوستان جا رہے ہیں۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور امریکی صدر جو بائیڈن نے آج فون پر بات چیت کی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ دونوں لیڈروں نے کورونا وبا سے نمٹنے کے طور طریقوں پر بات چیت کی ۔ بتادیں کہ امریکہ نے کووی شیلڈ ویکسین کے خام مال کو ہندوستان بھیجنے سے اتفاق رائے ظاہر کیا تھا۔


ہندوستان میں کورونا کا قہرجاری
ہندوستان میں کورونا کا قہرجاری


خیال رہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن نے اتوار کو ایک ٹویٹ میں کہا تھا کہ ’’کورونا وائرس کی شروعات میں جب ہمارے اسپتال بھرے تھے اور اس وقت جس طرح ہندوستان نے امریکہ کو مدد بھیجی تھی۔ ٹھیک اسی طرح ہم بھی ضرورت کی اس گھڑی میں ہندوستان کی مدد کرنے کیلئے پابند عہد ہیں‘‘۔

ملک میں مائع آکسیجن کے انڈسٹریل سیکٹر میں استعمال پر وزارت داخلہ نے پابندی لگادی ہے ۔ کانڈلا کے دین دیال بندرگاہ پر آکسیجن سلینڈر بنانے کیلئے خاص قسم کا اسٹیل سلینڈر بیرون ممالک سے بڑے مال بردار جہاز میں ڈھوکر لایا گیا ہے۔

سنگاپور سے آکسیجن کنسنٹریٹ کی بڑی سپلائی طیاروں کے ذریعہ ہورہی ہے ۔ فرانس سے پورٹیبل آکسیجن جنریٹر مشینیں منگوائی جارہی ہیں ۔ ملک میں سبھی اسٹیل پلانٹس ، خواہ وہ پبلک سیکٹر میں ہوں یا پھر پرائیویٹ سیکٹر میں ، وہاں انڈسٹریل گریڈ آکسیجن کو میڈیکل گریڈ آکسیجن میں جنگی سطح پر تبدیل کیا جارہا ہے ۔ ملک میں آکسیجن ایکسپریس کے طور پر مال گاڑیاں پٹریوں پر دوڑ رہی ہیں-
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 27, 2021 10:51 AM IST