گائے اور اوم سُن کر کچھ لوگوں کے بال کھڑے ہوجاتے ہیں، متھرا میں پی ایم مودی کا خطاب

متھرا میں وزیراعظم نریندرمودی نے اپوزیشن کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ گائے اور اوم سُن کر کچھ لوگوں کے بال کھڑے ہوجاتے ہیں۔متھرامیں اپنے خطاب کے دوران وزیراعظم نریندرمودی نے کہاکہ دہشت گردی اب ایک نظریہ بن چکی ہے۔

Sep 11, 2019 03:31 PM IST | Updated on: Sep 11, 2019 03:39 PM IST
گائے اور اوم  سُن کر کچھ لوگوں کے بال کھڑے ہوجاتے ہیں، متھرا میں پی ایم مودی کا خطاب

متھرا میں پی ایم مودی کا خطاب-(تصویر:نیوز18)۔

متھرا میں وزیراعظم نریندرمودی نے اپوزیشن کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ گائے اور اوم سُن کر کچھ لوگوں کے بال کھڑے ہوجاتے ہیں۔متھرامیں اپنے خطاب کے دوران وزیراعظم نریندرمودی نے کہاکہ دہشت گردی اب ایک نظریہ بن چکی ہے۔جوکسی سرحدسے نہیں بندھی ہے۔وہیں انہوں نے کہاکہ دہشت گردی دنیاکے لیے خطرہے۔اورہمارے پڑوس میں اس کی جڑیں کافی مضبوط ہیں۔وہیں ہندوستان اس خطرے سے اپنی سطح پرمقابلہ کررہا ہے۔

متھرامیں پی ایم مودی نے مویشیوں کے لیےٹیکہ کاری پروگرام کی شروعات کی۔اس کے علاوہ وزیراعظم نریندرمودی نے سِنگل یوزپلاسٹک کے خلاف مہم کی شروعات کی ۔پی ایم مودی نے کہا کہ دنیاماحولیات کے رول ماڈل ڈھونڈ رہی ہے اور ہندوستان دنیا کے ایک رول ماڈل بن سکتاہے۔پی ایم مودی کا کہناہے کہ سوچھتا سیوا ابھیان پلاسٹک سے نجات کی مہم ہے اورہمیں 2اکتوبر تک سِنگل یوز پلاسٹک سے چھٹکارا حاصل کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ پلاسٹک کی وجہ سے مویشیوں کی موت ہورہی ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں ماحولیات اور مویشیوں کی فکر کرنی ہوگی۔اس موقع پرپی ایم مودی نے اترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کی تعریف کی ہے۔ مودی نے کہا کہ انفسلائٹس کے خلاف یوگی حکومت کی مہم کی قابلِ ستائش رہی ہے۔

Loading...

وزیراعظم نے کہا کہ پلاسٹک کا مسئلہ وقت کے ساتھ سنگین ہوتا جارہا ہے۔ پلاسٹک کے کھانے سے مویشی اورآبی جانداروں کے نگلنے سے ان کا زندہ بچنا مشکل ہورہا ہے۔ ایک بار استعمال کئے جانے والے پلاسٹک سے نجات حاصل کرنی ہوگی۔انہوں نے لوگوں سے اپنے گھر،دفتر اور کام کرنے کے مقامات پر پلاسٹک سے پاک کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اس میں غیر سرکاری اداروں اسکولوں،کالجوں اور خواتین تنظیموں اور دیگر تنظیموں کو اس مہم میں شامل ہونا چاہئے۔ اس سے نئی نسل کے مسقبل روشن ہوگا۔

وزیراعظم مودی نے کہا کہ پلاسٹک کچرا اکٹھا کئے جانے کے بعد اس کا ریسائیکل کیا جائے گا اور جس سے ایسا نہیں کیا جائے گا اسے سیمنٹ کارکھانوں اور سڑکوں کی تعمیر میں استعمال کیا جائےگا۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری پروگراموں میں پلاسٹک کی بوتلوں کے استعمال نہیں کیا جائےگا اور اس کی جگہ پر مٹی یا دھات کے برتنوں کا استعمال کیا جائےگا۔انہوں نے کہا کہ ڈیری اور دودھ پیداوار کو بڑھانے کے لئے نئے ایجادات کی ضرورت ہے۔ مویشیوں میں دودھ کو بڑھانے کے لئے ہرے چارے کی ضرورت ہے۔

Loading...