உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دلت اسکالر کی خودکشی کی جانچ اوراس کے ساتھ انصاف کے لئے دنیا بھر کے 130 ماہرین تعلیم کا وائس چانسلر کو خط

    حیدرآباد : دنیا کے تقریباً 130 ماہرین تعلیم نے وائس چانسلر حیدرآباد یونیورسٹی کو کھلا خط روانہ کیا ہے ، جس میں دلت اسکالر روہت ویمولاکی خودکشی پر گہرے دکھ اور برہمی کا اظہار کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ واقعہ کی جانچ اور پورا پورا انصاف کرنے پر بھی زور دیا گیا۔

    حیدرآباد : دنیا کے تقریباً 130 ماہرین تعلیم نے وائس چانسلر حیدرآباد یونیورسٹی کو کھلا خط روانہ کیا ہے ، جس میں دلت اسکالر روہت ویمولاکی خودکشی پر گہرے دکھ اور برہمی کا اظہار کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ واقعہ کی جانچ اور پورا پورا انصاف کرنے پر بھی زور دیا گیا۔

    حیدرآباد : دنیا کے تقریباً 130 ماہرین تعلیم نے وائس چانسلر حیدرآباد یونیورسٹی کو کھلا خط روانہ کیا ہے ، جس میں دلت اسکالر روہت ویمولاکی خودکشی پر گہرے دکھ اور برہمی کا اظہار کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ واقعہ کی جانچ اور پورا پورا انصاف کرنے پر بھی زور دیا گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      حیدرآباد : دنیا کے تقریباً 130 ماہرین تعلیم نے وائس چانسلر حیدرآباد یونیورسٹی کو کھلا خط روانہ کیا ہے ، جس میں دلت اسکالر روہت ویمولاکی خودکشی پر گہرے دکھ اور برہمی کا اظہار کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ واقعہ کی جانچ اور پورا پورا انصاف کرنے پر بھی زور دیا گیا۔


      ان تمام ماہرین تعلیم نے اپنی دستخط سے جاری کردہ بیان میں کہا کہ ہندوستان میں اعلیٰ تعلیمی نظام میں ذات پات کے امتیاز کا جو واقعہ پیش آیا، اس کی جامع جانچ ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد یونیورسٹی کے پانچ دلت طلبہ کی سیاسی دباؤ میں آکر معطلی سے کئی سوالات ابھر رہے ہیں۔


      روہت سے اس کا مستقبل چھین لیا گیا تھا اور اس نے مایوس ہوکر خودکشی کرلی۔ ساؤتھ ایشیا کے انٹرنیشنل اسکالرس نے یونیورسٹی کے حکام سے معطل کئے گئے دیگر چار طلبہ کی فوری بحالی ان کے ارکان خاندان کو مدد کی فراہمی کے علاوہ جو کچھ حالات پیش آئے ، ان کی جامع جانچ کا مطالبہ کیا ہے۔

      First published: