உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم کا رجسٹریشن منسوخ کرنے کے مطالبہ کو لے کر عدالت میں عرضی

    اسد الدین اویسی: فائل فوٹو۔

    اسد الدین اویسی: فائل فوٹو۔

    درخواست میں یہ الزام لگایا گیا ہے کہ یہ صرف مسلمانوں کے مسئلہ کو اٹھاتی ہے اور مذہب کے نام پر ووٹ مانگتی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      دلی ہائی کورٹ میں منگل کو ایک درخواست دائر کی گئی جس میں اسد الدین اویسی کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم کا ایک سیاسی پارٹی کے طور پر رجسٹریشن منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ درخواست میں یہ الزام لگایا گیا ہے کہ یہ صرف مسلمانوں کے مسئلہ کو اٹھاتی ہے اور مذہب کے نام پر ووٹ مانگتی ہے۔

      شیوسینا کی تلنگانہ یونٹ کے صدر کی طرف سے دائر درخواست میں الیکشن کمیشن کے 19 جون 2014 کے حکم کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے، جس کے ذریعے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کو تلنگانہ کی ریاستی سطح کی پارٹی کی منظوری دی گئی تھی۔

      درخواست گزار تروپتی نرسنگھ مراری نے دعوی کیا کہ اے آئی ایم آئی ایم کا آئین اور کام سپریم کورٹ کے طے کردہ رہنما خطوط کے خلاف ہے اور پارٹی کو نااہل ٹھہرایا جانا چاہیے کیونکہ اس کا مقصد سیکولرازم کے تصور کے خلاف ہے۔ یہ عوامی نمائندگی ایکٹ کی ضروریات میں سے ایک ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: جب اسدالدین اویسی نے کہا ’’تو میرے خلاف جاری ہو جاتا فتویٰ‘’۔

      ایڈووکیٹ ہری شنکر جین اور وشنو شنکر جین کی طرف سے دائر درخواست میں الیکشن کمیشن کو اے آئی ایم آئی ایم کا رجسٹریشن سیاسی پارٹی کے طور پر تسلیم کرنے اور ماننے سے روکنے کی ہدایت دینے کی مانگ کی گئی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: داڑھی کی جگہ گردن بھی کاٹو گے تب بھی ہندوستان میں زندہ رہے گا اسلام: اویسی

      یہ بھی پڑھیں: الور موب لنچنگ واقعہ: اویسی نے کیا ٹویٹ، مودی حکومت کے چار سال ۔ لنچ راج

       

       
      First published: