உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وسیم رضوی پر پیغمر محمدﷺ کے خلاف قابل اعتراض باتیں لکھنے کا الزام، اسد الدین اویسی نے درج کرائی شکایت

    رضوی پر اپنی کتاب میں قابل اعتراض باتیں لکھنے کا الزام 

    رضوی پر اپنی کتاب میں قابل اعتراض باتیں لکھنے کا الزام 

    انہوں نے کہا، "کتاب کے مندرجات اور قابل اعتراض بیانات ان لوگوں کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے کے لیے لکھے گئے ہیں جو پیغمبر اسلام کے پیروکار ہیں اور اسلام کے اصولوں پر عمل پیرا ہیں۔"

    • Share this:
      حیدرآباد۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے اتر پردیش شیعہ وقف بورڈ  (Uttar Pradesh Shia Waqf Board) کے سابق چیئرمین وسیم رضوی کے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔ اویسی کا الزام ہے کہ رضوی نے اپنی کتاب 'محمد' میں پیغمبر اسلام کے بارے میں قابل اعتراض باتیں لکھی ہیں۔ اس کے ساتھ انہوں نے وقف بورڈ کے سابق چیئرمین کی گرفتاری کی بھی امید ظاہر کی ہے۔ اے آئی ایم آئی ایم (AIMIM)  کے سربراہ  اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے اس سلسلے میں حیدرآباد کے پولیس کمشنر انجنی کمار کو ایک خط سونپا ہے۔

      بدھ کو نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران اویسی نے کہا، 'ہم نے حیدرآباد پولیس کمشنر سے ملاقات کی ہے۔ یوپی شیعہ وقف بورڈ کے سابق چیئرمین وسیم رضوی نے ایک کتاب لکھی ہے، جس میں پیغمبر محمد ﷺ کے بارے میں قابل اعتراض بیان دئے  گئے ہیں۔ ہم نے ان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست کی ہے۔ کمشنر نے فوجداری مقدمہ درج کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ ہمیں امید ہے کہ اسے جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔

      بھاشا کے مطابق رضوی پر اپنی کتاب میں قابل اعتراض باتیں لکھنے کا الزام ہے۔ اویسی نے شکایت میں کہا، 'ہندی میں لکھی گئی کتاب میں اسلام اور اس کے پیروکاروں کے خلاف قابل اعتراض زبان استعمال کی گئی ہے۔'

      (फोटो: ANI/Twitter)


      انہوں نے کہا، "کتاب کے مندرجات اور قابل اعتراض بیانات ان لوگوں کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے کے لیے لکھے گئے ہیں جو پیغمبر اسلام کے پیروکار ہیں اور اسلام کے اصولوں پر عمل پیرا ہیں۔"


      اس ماہ  محمد کے عنوان سے جاری ہوئی رضوی کی کتاب کی وجہ سے کافی تنازعہ ہوا تھا۔ ملک کے بعض حصوں میں اس کتاب کی مخالفت کی گئی تھی۔ اس سے پہلے بھی رضوی نے نومبر 2018 میں 'رام جنم بھومی' نام سے فلم تیار کی تھی۔ اس کے علاوہ وہ سپریم کورٹ میں درخواست دائر کرکے قرآن کی 26 آیات کو ہٹانے کی بھی اپیل کر چکےہیں ۔ ان کے اس قدم سے  بھی تنازعہ کھڑا ہو گیا تھا۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: