ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

ویکسین لائسنس کو لے کر مودی سرکار پر اویسی کا حملہ ، کہا : بھارت بایوٹیک اور سیرم سے آپ کا کیا رشتہ

Asaduddin Owaisi Coronavirus Vaccine License: اے آئی ایم آئی ایم کے سربراہ اسد الدین اویسی نے مودی حکومت کو گھیرتے ہوئے کہا کہ ہماری ساری ویکسین صرف دو ہی کمپنیاں کیوں بنا رہی ہیں؟

  • Share this:
ویکسین لائسنس کو لے کر مودی سرکار پر اویسی کا حملہ ، کہا : بھارت بایوٹیک اور سیرم سے آپ کا کیا رشتہ
ویکسین لائسنس کو لے کر مودی سرکار پر اویسی کا حملہ ، کہا : بھارت بایوٹیک اور سیرم سے آپ کا کیا رشتہ

حیدرآباد : آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی نے بدھ کو کورونا وائرس کی ویکسین کیلئے صرف دو ہی کمپنیوں کو لائسنس دینے پر وزیر اعظم مودی پر نشانہ سادھا اور پوچھا کہ آپ کا ان سے کیا رشتہ ہے ؟ اے آئی ایم آئی ایم کے ٹویٹر اکاونٹ پر جاری ایک ویڈیو میں اویسی نے کہا کہ کوویکسین کو آئی سی ایم آر نے تیار کیا ہے ، جو سرکار سے وابستہ ہے اور پھر سرکار نے صرف بھارت بایوٹیک کو اس کا لائسنس دیا ۔ ہماری ساری ویکسین صرف دو ہی کمپنیاں کیوں بنارہی ہیں ؟


اویسی نے مودی سرکار کو گھیرتے ہوئے کہا کہ دوسری کمپنیوں کو ویکسین کا پروڈکشن کرنے کیلئے لائسنس کیوں نہیں مل سکتا ؟ کیا مودی سرکار کے ساتھ بھارت بایوٹیک اور سیرم انسٹی ٹیوٹ کا کنیکشن الیکٹورل بانڈ پر مبنی ہے ؟ انہوں نے مزید کہا کہ مودی نے ویکسن کے 50 فیصد پروڈکشن کو ڈائیورٹ کیا ہے ، اب ویکسین حاصل کرنے کیلئے ریاستی سرکاروں کو پرائیویٹ سیکٹر کے ساتھ مقابلہ کرنا ہوگا ۔ یہ کس طرح کی ویکسین پالیسی ہے ۔



غور طلب ہے کہ نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف وائرولاجی اور آئی سی ایم آر کے ساتھ شراکت داری میں حیدرآباد کی کمپنی بھارت بایوٹیک کے ذریعہ ڈیولپ کوویکسین کے ایمرجسنی استعمال کو تین جنوری کو منظوری ملی تھی ۔ ٹرائل کے نتیجوں کے بعد سامنے آیا کہ یہ ٹیکہ 78 فیصدی تک موثر ہے ۔

دوسری جانب کووی شیلڈ کو آکسفورڈ یونیورسٹی اور برطانیہ سویڈن کمپنی ایسٹرازینکا نے ڈیولپ کیا ہے اور اس کا پروڈکشن پونے کی کمپنی سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا ( ایس آئی آئی ) کررہی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 12, 2021 05:14 PM IST