ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

اویسی کا این پی آر۔ این آر سی پر امت شاہ کو کرارا جواب۔ گمراہ کیوں کر رہے ہیں؟ جب تک سورج پورب سے..۔

اویسی نے کہا کہ ’’امت شاہ صاحب، جب تک سورج پورب سے طلوع ہوتا رہے گا ہم سچ کہتے رہیں گے۔ این پی آر، این آر سی کی طرف پہلا قدم ہے‘‘۔

  • Share this:
اویسی کا این پی آر۔ این آر سی پر امت شاہ کو کرارا جواب۔ گمراہ کیوں کر رہے ہیں؟ جب تک سورج پورب سے..۔
اسد الدین اویسی اور امت شاہ: فائل فوٹو

نئی دہلی۔ حیدر آباد سے رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے قومی آبادی رجسٹر ( این پی آر) اور نیشنل رجسٹر آف سٹیزنس ( این آر سی) پر  مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کے بیان کا کرارا جواب دیا ہے۔ اویسی نے این پی آر کی مخالفت کرتے ہوئے نیوز ایجنسی اے این آئی سے کہا ’’ وزیر داخلہ ملک کو گمراہ کیوں کر رہے ہیں؟ پارلیمنٹ میں انہوں نے کہا تھا کہ اویسی جی این آر سی پورے ملک میں نافذ ہو گا۔ امت شاہ صاحب، جب تک سورج پورب سے طلوع ہوتا رہے گا  ہم سچ کہتے رہیں گے۔ این پی آر، این آر سی کی طرف پہلا قدم ہے‘‘۔



بتا دیں کہ اویسی نے کہا تھا کہ یہ این آر سی کا ہی دوسرا نام ہے۔ اویسی کے اس بیان پر وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ اگر ہم کہیں گے کہ سورج پورب میں اگتا ہے تو وہ کہیں گے کہ نہیں... نہیں یہ مغرب میں ہوتا ہے۔ یہ ان کا موقف ہوتا ہے اور اس پر مجھے کوئی تعجب نہیں ہے۔ پھر بھی میں انہیں بھروسہ دلاتا ہوں کہ اس کا این آر سی سے کوئی لینا دینا نہیں ہے، یہ بہت الگ طرح کا عمل ہے۔

اویسی نے اس سے پہلے کہا تھا کہ این پی آر ہندوستانی شہریوں کے قومی رجسٹر کی طرف پہلا قدم ہے جو ملک گیر سطح پر این آر سی کا ہی دوسرا نام ہے۔ این پی آر اور این آر سی کے درمیان تعلق کو سمجھنا اہم ہے۔
First published: Dec 25, 2019 11:23 AM IST