உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اسد الدین اویسی کی پاکستان کووارننگ- کشمیرمعاملوں میں مداخلت برداشت نہیں

    اسدالدین اویسی: فائل فوٹو

    اسدالدین اویسی: فائل فوٹو

    جموں وکشمیرکے پہلے یوپی ایس سی ٹاپراورحال میں استعفیٰ دینے والے شاہ فیصل کواپنی خود کی آزاد سیاسی راہ منتخب کرنے کا بھی مشورہ دیا

    • Share this:
      آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) سربراہ اسد الدین اویسی نے پاکستان سے ہفتہ کوکہا کہ وہ کشمیرمعاملوں میں مداخلت کرنا بند کرے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے اوربنا رہے گا۔ حیدرآباد کے ممبرپارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے کہا کہ مرکزمیں چاہے کانگریس ہو، یا بی جے پی۔ کشمیروادی میں حالات کو بہتربنانے کے لئے ان کے پاس کوئی حکمت عملی اورنظریہ نہیں ہے۔

      انہوں نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ کشمیرپرحکمت عملی میں استحکام رہنی چاہئے، لیکن بدقسمتی سے اس کی کمی ہے۔ انہوں نے ایک رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کی قیادت اورحکمت عملی والی مرکزی حکومت کشمیری پنڈتوں کے لئے کچھ نہیں کررہی ہے۔

      اسد الدین اویسی نے کہا کہ کشمیرمسئلہ کا حل جیمس بانڈ یا ریمبوشیلی میں نہیں ہونا چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کوکشمیرمعاملوں میں مداخلت کرنا بند کردینا چاہئے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ حال ہی میں استعفیٰ دینے والے 2010 بیچ کے آئی اے ایس افسرشاہ فیصل کو اپنی خود کی آزاد سیاسی راہ منتخب کرنی چاہئے، کشمیرکواس کی ضرورت ہے۔
      First published: