உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اپولو کے چیئرمین کا انکشاف ، جے للتا کے علاج کے دوران اسپتال کے سبھی سی سی ٹی وی کیمرے تھے بند

    ششی کلا کے ذریعہ جاری کئے گئے ویڈیو کا اسکرین شاٹ فوٹو

    ششی کلا کے ذریعہ جاری کئے گئے ویڈیو کا اسکرین شاٹ فوٹو

    اپولو اسپتال کے چیئرمین ڈاکٹر پرتاپ ریڈی نے انکشاف کیا ہے کہ تمل ناڈو کی سابق وزیر اعلی جے للتا کے علاج کے دوران اسپتال کے سبھی سی سی ٹی وی کیمرے بند کردئے گئے ۔

    • Share this:
      چنئی : اپولو اسپتال کے چیئرمین ڈاکٹر پرتاپ ریڈی نے انکشاف کیا ہے کہ تمل ناڈو کی سابق وزیر اعلی جے للتا کے علاج کے دوران اسپتال کے سبھی سی سی ٹی وی کیمرے بند کردئے گئے ۔ اسپتال سربراہ کا یہ بیان جے للتا کی قریبی وی کے ششی کلا کے اس بیان کے بالکل برعکس ہے ، جس میں انہوں نے کہا تھا کہ آخری دنوں میں جے للتا کی ویڈیو گرافی کروائی جارہی تھی۔
      جسٹس اے اروموگاسوامی کمیشن کو دئے گئے اپنے حلف نامہ میں ششی کلا نے کہا تھا کہ انہوں نے جے للتا کی اجازت سے ان کا ویڈیو ریکارڈ کیا تھا ۔ حلف نامہ میں ششی کلا نے لکھا تھا کہ انہوں نے جے للتا کی صحت کا ریکارڈ رکھنے کیلئے ایسا کیا ۔ انہوں نے کہا کہ اپولو اسپتال میں ریکارڈ کئے چار ویڈیو کلپ انہوں نے کمیشن کو دئے ہیں ۔
      اب اس کے برعکس بیان دیتے ہوئے اسپتال کے سربراہ نے کہا ہے کہ جے للتا 75 دنوں تک اسپتال میں داخل تھیں ، اس دوران سبھی سی سی ٹی وی کیمرے بند کردئے گئے تھے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اسپتال کے 24 بیڈ انٹنسیو کیئر یونٹ کو خالی کرایا گیا تھا اور جے للتا وہاں واحد مریض تھیں۔
      اپولو اسپتال کے چیئرمین پرتاپ سی ریڈی نے کہا کہ سی سی ٹی وی کیمرے بند کردئے گئے تھے ، ایک آئی سو یو میں وہ اکیلی مریض تھیں ۔ فوٹیج ریکارڈ نہیں کئے گئے کیونکہ وہ ( جے للتا کے قریبی ) نہیں چاہتے تھے کہ ہر کوئی ان کے علاج کی کارروائی کو دیکھے۔
      خیال رہے کہ جے للتا 22 ستمبر سے پانچ دسمبر 2016 تک اسپتال میں داخل تھیں ۔ اس دوران کسی کو بھی ان سے ملنے کی اجازت نہیں دینے کے الزامات پر ششی کلا نے کمیشن کو بتایا کہ تمل ناڈو کے سابق گورنر سی ایچ ودیا ساگر راو نے جے للتا سے 22 اکتوبر 2016 کو ملاقات کی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ اے ائی اے ڈی ایم کے کے لیڈران او پنیر سیلوم ، ایم تھمپی دورائی اور وزیر صحت سی وجے بھاسکر نے بھی 22 سے 27 ستمبر کے دوران ان سے ملاقات کی تھی ۔ حالانکہ پنیر سیلوم اور تھمپی دورائی نے کہا ہے کہ جے للتا کے اسپتال میں رہنے کے دوران انہیں ان سے ملنے نہیں دیا گیا تھا۔
      First published: