ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

حکومت کی گائڈلائنس پرعمل کرتےہوئےمسجدوں میں نمازیں اداکی جائیں، کرناٹک کے امیر شریعت کی اپیل

8 جون بروز پیر سے دیگر عبادت گاہوں کے مسجدوں کے دروازے بھی عوام کیلئے کھلنے والے ہیں۔ اس سلسلے میں بنگلورو کی مسجد قادریہ میں کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی کی صدارت میں اہم میٹنگ ہوئی۔

  • Share this:
حکومت کی گائڈلائنس پرعمل کرتےہوئےمسجدوں میں نمازیں اداکی جائیں، کرناٹک کے امیر شریعت کی اپیل
8 جون بروز پیر سے دیگر عبادت گاہوں کے مسجدوں کے دروازے بھی عوام کیلئے کھلنے والے ہیں۔ اس سلسلے میں بنگلورو کی مسجد قادریہ میں کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی کی صدارت میں اہم میٹنگ ہوئی۔

8 جون بروز پیر سے دیگر عبادت گاہوں کے مسجدوں کے دروازے بھی عوام کیلئے کھلنے والے ہیں۔ اس سلسلے میں بنگلورو کی مسجد قادریہ میں کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی کی صدارت میں اہم میٹنگ ہوئی۔ شیواجی نگر کے ایم ایل اے رضوان ارشد کی جانب سے منعقدہ اس اجلاس میں علماء کرام، سرکاری افسران، مساجد کے ذمہ داران نے شرکت کی۔ اجلاس میں اقلیتی محکمہ کے سکریٹری ابراہیم اڈور اور آئی اے ایس افسر محمد محسن نے حصہ لیا۔ ان افسروں نے کہا کہ ریاست کرناٹک میں دن بدن کورونا کے پوزیٹیو کیسوں میں اضافہ ہورہا ہے۔

عوام کے دباؤ کو دیکھتے ہوئے حکومت نے مندر، مسجد، چرچ اور دیگر عبادت گاہیں کھولنے کی اجازت دی ہے۔ لیکن عوام کو چاہئے کہ وہ پوری طرح احتیاط برتتے ہوئے عبادت گاہوں کا رخ کریں۔ اجلاس میں علماء کرام اور دانشوروں نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ اس موقع پر یہ بات کہی گئی کہ لاک ڈاؤن کے نفاذ کے بعد تبلیغی جماعت کے ساتھ پیش آئے واقعہ اور اس پر ہوئی فرقہ پرستی کی سیاست کو مسلمان نہ بھولیں۔ اجلاس میں علماء کرام اور دانشوروں نے کہا کہ نظام الدین مرکز کے معاملے میں ایک طبقہ کو نشانہ بنانے کی پرزور کوششیں ہوئیں۔


ملت کو بدنام کرنے کی چالیں چلی گئیں، کورونا وائرس کی وبا کیلئے ایک طبقہ کو ذمہ دار ٹہرانے کی خطرناک سازشیں ہوئیں۔ ان تمام باتوں کو دھیان میں رکھتے ہوئے آنے والے دنوں میں مسلمان بیداری اور ذمہ داری کے ساتھ رہیں۔ عبادت گاہوں کیلئے جاری کی گئی ہدایتوں پر پوری طرح عمل کریں اور کسی بھی صورت میں غفلت نہ برتیں۔کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی نے کہاکہ کورونا کی وبا کے درمیان زندگی کے پہیہ کو آگے بڑھانے کی ضرورت ہے۔ دیگر سرگرمیوں کے ساتھ عبادت گاہوں کو بھی کھولنے کی اجازت دی گئی ہے۔ لیکن عوام کو چاہیے کہ وہ حکومت اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری کی گئی گائڈ لائنس پر پوری طرح عمل کریں۔ مسجدوں میں سماجی فاصلے، سنیٹائزر، وقت وقت پر پاکی صفائی دیگر تمام احتیاطی تدابیر کے ساتھ نمازیں ادا کریں۔

ایم ایل اے رضوان ارشد نے کہا کہ کورونا وائرس کی وبا کے درمیان بھی فرقہ پرست طاقتوں نے نفرت پھیلانے کی کوششیں کی ہیں۔ مسلمان ایسا کوئی موقع فراہم نہ کریں جس سے فرقہ پرست طاقتوں کو کوئی بہانہ مل جائے۔ آئی اے ایس افسر محمد محسن نے کہا کہ کورونا کی وبا تیزی کے ساتھ پھیل رہی ہے۔ کرناٹک میں ایک ہی دن میں 500 سے زائد معاملات بھی پیش آئے ہیں۔ لہذا عوام کسی بھی طرح کی غفلت نہ برتیں، اپنی اور دوسروں کی صحت کا خیال رکھیں۔محکمہ اقلیتی بہبود کے سکریٹری ابراہیم اڈور نے کہا کہ مسجدوں، درگاہوں کیلئے تفصیلی گائڈ لائنس جاری کئے گئے ہیں۔ ان رہنمایانہ خطوط کے مطابق مسجد کمیٹیاں انتظامات کریں۔ رکن اسمبلی رضوان ارشد نے بھی درخواست کی کہ ملت کے صاحب حیثیت افراد آگے آئیں۔ سنیٹائزیش، پاکی صفائی اور دیگر انتظامات کیلئے مسجدوں کو مالی امداد فراہم کریں۔

First published: Jun 07, 2020 03:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading