உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Amalapuram: آندھرا کے وزیر کے گھر کو آگ لگا دی گئی! ضلع کا نام تبدیل کرنے پر ہوا تشدد

    پولیس نے احتجاج کو روکنے کی کوشش کی جس سے مظاہرین مشتعل ہو گئے اور حالات قابو سے باہر ہو گئے۔

    پولیس نے احتجاج کو روکنے کی کوشش کی جس سے مظاہرین مشتعل ہو گئے اور حالات قابو سے باہر ہو گئے۔

    یہ الزام لگاتے ہوئے کہ کچھ سیاسی جماعتوں اور سماج دشمن عناصر نے مبینہ طور پر آتشزدگی کے لیے اکسایا۔ ریاستی وزیر داخلہ تنیتی ونیتھا نے کہا کہ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ اس واقعے میں 20 سے زیادہ پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔ مجرموں کو سزا دی جائے گی۔

    • Share this:
      آندھرا پردیش کے املا پورم قصبے (Andhra Pradesh’s Amalapuram town) میں منگل کے روز دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔ جب آتشزدگی کے بعد پولیس نے ان لوگوں پر لاٹھی چارج کیا جو ضلع کلکٹر کے دفتر کے نزدیک نئے بنائے گئے کونسیما ضلع کا نام بدل کر بی آر امبیڈکر کونسیما ضلع رکھنے کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔ تشدد کے دوران ہجوم کے پتھراؤ کے نتیجے میں 20 سے زیادہ پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

      پولیس کی گاڑی اور ایک تعلیمی ادارے کی بس کو آگ لگا دی گئی۔ ہجوم نے ریاستی وزیر پی وشوروپ (P. Viswaroop) کی رہائش گاہ پر بھی حملہ کیا اور املاک کی توڑ پھوڑ کی۔ وزیر کے اہل خانہ بال بال بچ گئے کیونکہ پولیس نے انہیں محفوظ مقام پر منتقل کر دیا تھا۔ اس کے علاوہ کونسیما ضلع میں ایک ایم ایل اے پوناڈا ستیش کے گھر کو بھی مظاہرین نے نذر آتش کر دیا۔
      یہ الزام لگاتے ہوئے کہ کچھ سیاسی جماعتوں اور سماج دشمن عناصر نے مبینہ طور پر آتشزدگی کے لیے اکسایا۔ ریاستی وزیر داخلہ تنیتی ونیتھا نے کہا کہ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ اس واقعے میں 20 سے زیادہ پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔ مجرموں کو سزا دی جائے گی۔
      4 اپریل کو نئے کونسیما ضلع کو سابقہ ​​مشرقی گوداوری سے الگ کر دیا گیا تھا۔ پچھلے ہفتے وائی ایس جگن موہن ریڈی کی زیرقیادت آندھرا پردیش حکومت نے ایک ابتدائی نوٹیفکیشن جاری کیا جس میں کونسیما کا نام بدل کر بی آر امبیڈکر کونسیما ضلع رکھنے کی کوشش کی گئی اور لوگوں سے اعتراضات پر بات چیت کرنے کے لیے کہا گیا تھا۔

      مزید پڑھیں: شیعہ مذہبی رہنما کلب جواد نے کہا- اعظم خان اور جتیندر تیاگی مل کر بنائیں گے نئی پارٹی

      اس پس منظر میں کونسیما سادھنا سمیتی نے ضلع کے مجوزہ نام کی تبدیلی پر اعتراض کیا اور وہ چاہتی تھی کہ کونسیما نام برقرار رکھا جائے۔ سمیتی نے آج ایک احتجاج منظم کیا اور نام تبدیل کرنے کے خلاف ضلع کلکٹر ہمانشو شکلا کو میمورنڈم پیش کرنے کی کوشش کی۔

      مزید پڑھیں: Gyanvapi Mosque Case: گیان واپی مسجد معاملے میں اب 26 مئی کو ہوگی اگلی سماعت

      پولیس نے احتجاج کو روکنے کی کوشش کی جس سے مظاہرین مشتعل ہو گئے اور حالات قابو سے باہر ہو گئے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: