ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

اویسی کی وارننگ۔ این پی آر کا شیڈول فائنل ہوا تو مخالفت کا طریقہ بھی ہو گا طئے

این پی آر سے منسلک ایک لنک شئیر کرتے ہوئے اسدالدین اویسی نے لکھا' این پی آر، این آر سی کی طرف بڑھتا پہلا قدم ہے۔ ہندستان کے غریبوں کو اس عمل میں مجبور نہیں کیا جانا چاہئے جس کے سبب ان کی مشتبہ شہری کے طور پر نشاندہی کی جا سکتی ہے'۔

  • Share this:
اویسی کی وارننگ۔ این پی آر کا شیڈول فائنل ہوا تو مخالفت کا طریقہ بھی ہو گا طئے
اسدالدین اویسی کی فائل فوٹو

نئی دہلی۔ قومی آبادی رجسٹر (National Population Register) کو لے کر تنازعہ ایک بار پھر بڑھتا دکھائی دے رہا ہے۔ قومی آبادی رجسٹر (NPR) بنانے کا شیڈول طئے ہونے کی جانکاری سامنے آمنے کے بعد حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اور آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ اگر این پی آر کا شیڈول فائنل ہو چکا ہے تو اس کی مخالفت کا بھی شیڈول جلد ہی فائنل ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل رجسٹر آف سٹیزنس (NRC) سے پہلے کا مرحلہ این پی آر ہے۔


این پی آر سے منسلک ایک لنک شئیر کرتے ہوئے اسدالدین اویسی نے لکھا' این پی آر، این آر سی کی طرف بڑھتا پہلا قدم ہے۔ ہندستان کے غریبوں کو اس عمل میں مجبور نہیں کیا جانا چاہئے جس کے سبب ان کی مشتبہ شہری کے طور پر نشاندہی کی جا سکتی ہے'۔ انہوں نے حکومت کو وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ اگر این پی آر کے کام کے شیڈول کو حتمی شکل دی جا رہی ہے تو اس کی مخالفت کرنے کے لئے پروگرام کو بھی حتمی شکل دی جائے گی۔



بتا دیں کہ اسدالدین اویسی کی طرف سے اس طرح کا ردعمل اس خبر کے بعد آیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ ملک کے رجسٹرار جنرل کے دفتر میں قومی آبادی رجسٹر کے لئے کیا سوال پوچھے جانے ہیں اور اسے کس طرح سے ملک میں نافذ کیا جائے گا، اس کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔ حالانکہ، ابھی تک یہ طئے نہیں ہو سکا ہے کہ اسے کس تاریخ سے شروع کیا جائے گا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 20, 2020 12:35 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading