ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

رام مندر بھومی پوجن سے پہلے اویسی نے کہا۔ بابری مسجد تھی اور رہے گی، انشا اللہ...

اویسی نے بابری مسجد اور اس کے انہدام کی ایک۔ ایک تصویر شئیر کرتے ہوئے کہا۔’ بابری مسجد تھی اور رہے گی، انشا اللہ۔

  • Share this:
رام مندر بھومی پوجن سے پہلے اویسی نے کہا۔ بابری مسجد تھی اور رہے گی، انشا اللہ...
اسد الدین اویسی کی فائل فوٹو

نئی دہلی۔ ایودھیا (Ayodhya) میں رام مندر کے بھومی پوجن (Ram Mandir Bhumi Pujan) سے پہلے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ (AIMPLB) نے رام مندر کی تعمیر کی اجازت دینے والے سپریم کورٹ (Supreme Court) کے فیصلے کو ’ غیر منصفانہ اور نامناسب‘ بتایا ہے۔ اس بیچ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (AIMIM) کے صدر اور رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے بھی ایسا ہی ٹویٹ کیا۔ اویسی نے بابری مسجد اور اس کے انہدام کی ایک۔ ایک تصویر شئیر کرتے ہوئے کہا۔’ بابری مسجد تھی اور رہے گی، انشا اللہ۔



اس سے پہلے حیدرآباد سے رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے پرینکا گاندھی کے بیان پر طنز کسا تھا۔ پرینکا کے بیان پر اویسی نے کہا تھا ’ خوشی ہے کہ اب وہ ناٹک نہیں کر رہے ہیں۔ کٹر ہندوتوا کے نظریے کو گلے لگانا چاہتے ہیں تو ٹھیک ہے، لیکن بھائی چارے کے مسئلہ پر وہ کھوکھلی باتیں کیوں کرتی ہیں۔

دراصل، پرینکا گاندھی نے بھومی پوجن پروگرام کی حمایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ’ رام سب میں ہیں،رام سب کے ساتھ ہیں ۔ بھگوان رام اور ماں سیتا کے پیغام اور ان کی مہربانی کے ساتھ رام للا کے مندر کا بھومی پوجن کا پروگرام قومی اتحاد،بھائی چارے اور ثقافت کے انضمام کا موقع بنے۔جے سیارام۔‘ انہوں نے بھگوان رام کے کردار کو اتحاد کا ذریعہ بتایا اور کہا کہ دنیا اور ہندوستانی جزائر کی ثقافت میں رامائن کی گہری اور امت چھاپ ہے۔ بھگوان رام ،ماتا سیتا اور رامائن کی کہانی ہزاروں برسوں سے ہندوستانی ثقافت اور مذہبی یادگاروں میں کرن کی طرح روشن ہے۔

قبل ازیں، آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے بیان جاری کرتے ہوئےکہا کہ بابری مسجد ہمیشہ مسجد رہے گی۔ غاصبانہ قبضہ سے حقیقت ختم نہیں ہو جاتی۔ بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا ولی رحمانی کے ذریعہ بیان جاری کرتے ہوئے کہا گیا ہے۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ ظالمانہ اور غیر منصفانہ ہے۔ مولانا ولی رحمانی نے مسلمانوں سے مایوس نہ ہونے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہاں کافی وقت تک بیت اللہ شریف بھی بتوں کی پوجا کا مرکز بنا رہا۔ مولانا ولی رحمانی نے ترکی کی مسجد آیا کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ حالات کتنے ہی زیادہ خراب ہوں ہمیں مایوس نہیں ہونا ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 05, 2020 11:45 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading