ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

بنگلورو پولیس کمشنر نے سٹی جامع مسجد کا کیا دورہ، لاک ڈاؤن میں نظم و نسق کی برقراری میں تعاون کرنے پر مسلمانوں کا ادا کیا شکریہ

بنگلورو کی سٹی جامع مسجد کی انتظامیہ کی دعوت پر جمعہ کی نماز شروع ہونے سے قبل ہی بھاسکر راو اپنے دیگر پولیس افسروں کے ساتھ مسجد پہنچے۔

  • Share this:
بنگلورو پولیس کمشنر نے سٹی جامع مسجد کا کیا دورہ، لاک ڈاؤن میں نظم و نسق کی برقراری میں تعاون کرنے پر مسلمانوں کا ادا کیا شکریہ
بنگلورو پولیس کمشنر نے سٹی جامع مسجد کا کیا دورہ

بنگلورو۔ یہاں کے پولیس کمشنر بھاسکر راو نے شہر کی جامع مسجد پہونچ کر پولیس اور حکومت کی جانب سے مسلمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ بھاسکر راو نے جمعہ کی نماز کے بعد جامع مسجد میں خطاب کیا۔  انہوں نے کہا کہ لاک ڈاون کے دروان عوام نے پولیس اور انتظامیہ کا بھرپور ساتھ دیا ہے۔ مسلمانوں نے اپنا مقدس مہینہ گھروں میں ہی گذارا، عید بھی گھروں میں ہی رہ کر منائی۔ نظم و ضبط کو بنائے رکھنے میں پولیس کا مکمل تعاون کیا۔ اس کیلئے وہ حکومت اور پولیس کی جانب سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے تعاون کا نتیجہ ہے کہ کرناٹک میں کورونا کی وبا قابو میں ہے۔


بنگلورو کی سٹی جامع مسجد کی انتظامیہ کی دعوت پر جمعہ کی نماز شروع ہونے سے قبل ہی بھاسکر راو اپنے دیگر پولیس افسروں کے ساتھ مسجد پہنچے۔ مسجد میں سماجی فاصلے، چہروں پر ماسک، سنیٹائزر اور دیگر احتیاطی تدابیر کے ساتھ ادا کی گئی نماز جمعہ کا بھاسکر راو نے معائنہ کیا۔ نماز کے مکمل ہونے کے بعد پولیس کمشنر کو  مسجد کے ممبر کے حصہ میں لایا گیا۔بھاسکر راو اور دیگر پولیس افسروں کی جامع مسجد کمیٹی نے گلپوشی اور شال پوشی کی۔ اس کے بعد پولیس کمشنر نے عوام سے خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ ڈھائی ماہ کے وقفہ کے بعد جب دیگر سرگرمیاں بحال ہونے لگیں تو حکومت نے عبادت گاہوں کو بھی کھولنے پر غور کرنا شروع کیا۔ انہوں نے کہا کہ مسجد ہوں یا مندر لوگ ذہنی سکون حاصل کرنے کیلئے یہاں آتے ہیں۔ کورونا کی وبا کے دوران لوگ احتیاطی تدابیر کے ساتھ عبادتیں بھی انجام دیں اس لئے حکومت نے تمام عبادت گاہوں کو کھولنے کا فیصلہ لیا۔ بھاسکر راو نے کہا کہ کورونا کی وبا اب بھی تیزی کے ساتھ پھیل رہی ہے۔ تجارت، سرکاری ، غیر سرکاری دفاتر سب کھلے ہوئے ہیں لیکن لوگ کسی بھی صورت میں غفلت نہ برتیں۔


بنگلورو کی سٹی جامع مسجد کی انتظامیہ کی دعوت پر جمعہ کی نماز شروع ہونے سے قبل ہی بھاسکر راو اپنے دیگر پولیس افسروں کے ساتھ مسجد پہنچے۔


بھاسکر راو نے لاک ڈاون میں پیش آئے چند واقعات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہر سماج میں فرقہ پرست لوگ رہتے ہیں۔ ایک دوسرے کو نشانہ بناتے رہتے ہیں۔ ایسی فرقہ پرست طاقتوں سے لوگوں کو ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ عوام کیلئے کوئی بھی پریشانی درپیش ہو یا پھر کسی طرح کی ناانصافی ہو تو وہ پولیس کمشنر کے دفتر سے رجوع ہوں۔ پولیس ہرقت، ہر ممکن مدد کرنے کیلئے تیار ہے۔سٹی مسجد کے سکریٹری سید نورالامین انور نے کہا کہ کورونا کی وبا کے درمیان ڈاکٹروں کے ساتھ پولیس کا رول بھی کافی اہم رہا ہے۔ مسلمان کورونا جانبازوں کی خدمات کا اعتراف کرتے ہیں۔

جامع مسجد کے خطیب و امام مولانا مقصود عمران رشادی نے عوام سے اپیل کی کہ وہ کورونا کے مریضوں یا پھر ان کے رشتہ داروں کو نفرت کی نگاہ سے نہ دیکھیں۔ اس مشکل گھڑی میں ایک دوسرے کے کام آنے کی کوشش کریں۔ کورونا کے مریضوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کریں۔ اس تقریب کے بعد نیوز 18 اردو سے بات کرتے ہوئے مولانا مقصود عمران رشادی نے یہ مشورہ دیا کہ تمام مساجد کے ذمہ داران اپنے اپنے علاقوں کے پولیس افسروں کو مسجد آنے کی دعوت دیں۔ کورونا کی وبا کے پیش نظر مسجد میں کئے گئے حفاظتی اور احتیاطی انتظامات کا معائنہ کروائیں۔ اس سے محکمہ پولیس سے مسلم سماج کے روابط مزید بہتر ہوں گے۔ اس طرح کی کوششیں نہ صرف کورونا وائرس بلکہ فرقہ پرستی کے وائرس کو بھی  شکست دینے میں کارگر ثابت ہوں گی۔
First published: Jun 20, 2020 08:31 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading