ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

بنگلورو کی مسجد رسول اللہ میں انوکھی کوشش مسجد کوعبادت کے ساتھ تعلیمی،سماجی سرگرمیوں کامرکزبنانے کی کوشش

مسجد کوعبادت کےساتھ دینی اور دنیاوی تعلیم حاصل کرنے کا مرکز بھی بنانے کی کوشش ملک کے آئی ٹی شہر بنگلورو میں دیکھنے کومل رہی ہے۔

  • Share this:
بنگلورو کی مسجد رسول اللہ میں انوکھی کوشش مسجد کوعبادت کے ساتھ تعلیمی،سماجی سرگرمیوں کامرکزبنانے کی کوشش
مسجد کوعبادت کےساتھ دینی اور دنیاوی تعلیم حاصل کرنے کا مرکز بھی بنانے کی کوشش ملک کے آئی ٹی شہر بنگلورو میں دیکھنے کومل رہی ہے۔

مسجد کوعبادت کےساتھ دینی اور دنیاوی تعلیم حاصل کرنے کا مرکز بھی بنانے کی کوشش ملک کے آئی ٹی شہر بنگلورو میں دیکھنے کومل رہی ہے۔ شہر کے نیو گُروپّن پالیہ میں موجود مسجدِ رسول اللہ میں ایک جانب عبادت کا روح پرورمنظر تو دوسری طرف تعلیم اور تربیت کا نظم دیکھنے کومل رہاہے۔ یہاں آپ نمازوں کی ادائیگی کے بعد مسجد کے ہی اندر موجود لائبریری میں کچھ وقت گذارسکتےہیں۔ نوری فاؤنڈیشن کے تحت قائم اس مسجد میں حال ہی میں نئی لائبریری قائم کی گئی ہے۔

مسجد کے اس لائبریری کے افتتاح مقامی کارپوریٹر رضوان نواب، حسنات تعلیمی ادارے کے صدر یونس سیٹھ اور نوری فاؤنڈیشن کے صدر عبدالسلام آمیری کے ہاتھوں عمل میں آیا۔  لائبرری اور اسٹڈی سینٹرکیلئےمسجد رسول اللہ کےایک ہال کو پوری طرح مختص کیاگیاہے۔ اس لائبریری میں دینی کتابوں کے ساتھ اسکول اورکالج کی نصابی کتابیں، جنرل نالج کی کتابیں،بچوں کیلئے کہانیوں، انگریزی گرامر اس طرح کئی موضوع پر کتابیں دستیاب ہیں۔

نوری فاؤنڈیشن کے سکریٹری سید سجاد احمد نے کہاکہ ان دنوں اسکول اور کالجوں کے سالانہ امتحانات سر پر ہیں۔ طلبا اس مسجد کے خاموش ماحول میں عبادتوں کے ساتھ اپنی پڑھائی، امتحانات کی تیاری بھی کرسکتے ہیں۔ سماجی کارکن الماس بابا کہتے ہیں کہ اس مسجد کو عبادت کے ساتھ ساتھ کمیونٹی سینٹر بنانے کی پہل کی گئی ہے۔ مذہبی سرگرمیوں کے علاوہ تعلیمی، سماجی خدمات کیلئے بھی مسجد کی عمارت کو استعمال کیاجارہاہے۔



مسجد کے ذمہ داروں نے کہاکہ سالانہ امتحانات کی تیاری کرنے والے طلبائ کیلئے وہ مسجد کورات بھر کھلارکھیں گے ۔ آنے والے دنوں میں امتحانات کی تیاری، کرئیرگائڈنس اسطرح تعلیمی ترقی کیلئے مختلف پروگرام ترتیب دینگے۔ مسلم سماج میں معاشی کمزوری کے سبب عام طور پرمکانات چھوٹے چھوٹے رہتے ہیں۔ کئی گھروں میں بچوں کیلئے پڑھائی کا مناسب انتظام تک نہیں رہتا۔ محلوں میں شورشرابے کی وجہ سے بھی بچوں کی پڑھائی متاثر ہوتی ہے۔ ان علاقوں میں کئی مسجدیں موجود رہتی ہیں۔ لیکن مسجدوں کو صرف نمازوں تک ہی محدود رکھا جاتاہے۔ دیر سے ہی صحیح بنگلورو کی نوری فاؤنڈیشن نے مسلم محلوں کے اس سنگین مسئلہ کوحل کرنے کیلئے قدم اٹھایاہے۔ فاؤنڈیشن کے تحت قائم مسجد رسول اللہ کو دین کے ساتھ ،سماجی اور تعلیمی سرگرمیوں کا مرکز بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔
First published: Mar 05, 2020 11:52 PM IST