ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

کورونا کی وبا کے پیش نظر بڑے جانوروں کی مشترکہ قربانی سے گریز کیا جائے ، علما نے کی اپیل

جامعہ فضیلت القرآن کے مہتم مولانا مطہر سراجی نے کہا کہ فرقہ پرست طاقتیں مسلمانوں کو نشانہ بنانے کیلئے بہانہ تلاش کرتی رہتی ہیں ۔ ایک جانب کورونا کی وبا پر قابو پانا ہے ، تو دوسری طرف فرقہ پرست طاقتوں کے ظلم اور زیادتیوں کو بھی روکنا ہے ۔

  • Share this:
کورونا کی وبا کے پیش نظر بڑے جانوروں کی مشترکہ قربانی سے گریز کیا جائے ، علما نے کی اپیل
کورونا کی وبا کے پیش نظر بڑے جانوروں کی مشترکہ قربانی سے گریز کیا جائے، عیدالاضحٰی سادگی کے ساتھ منائی جائے، بنگلورو میں علماء کرام کی اپیل

کورونا کی وبا کے درمیان عید قربان کی تیاریاں شروع ہوچکی ہیں ۔ بنگلورو میں علما کرام نے اپیل کی  ہے کہ اس مرتبہ عیدالاضحٰی سادگی کے ساتھ منائی جائے ۔ ریاست میں بھلے ہی لاک ڈاؤن ختم ہوا ہے ، لیکن کورونا کی خطرناک بیماری اب بھی برقرار ہے اور چاروں طرف پھیل رہی ہے ۔ لہذا محتاط طریقہ سے اور سماجی فاصلے کا خیال رکھتے ہوئے عید کے اعمال ادا کئے جائیں ۔ بنگلورو کی مسجد منورہ جامعہ فضیلت القرآن میں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے علما کرام نے چند سنگین مسائل کی جانب ملت کی توجہ مبذول کرائی ہے ۔ مفتی عبدالغفار نے کہا کہ ریاست کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی نے قربانی کے سلسلے میں چند اہم ہدایات جاری کئے ہیں۔


امیر شریعت کرناٹک کی جانب سے 9 جولائی 2020 کو جاری ہدایات میں واضح طور پر کہا گیا ہے کہ اس سال وبائی مرض اور مختلف بندشوں کی وجہ سے مشترکہ قربانی کا عمومی نظام نہ بنائیں تو بہتر ہوگا ۔ جامعہ حضرت ابوبکر صدیق کے مہتم مفتی عبدالغفار نے کہا کہ کورونا کی وبا کے پیش نظر اس سال بڑے جانوروں کی مشترکہ قربانی سے گریز کیا جائے ۔ تاہم انفرادی طور پر لوگ محفوظ طریقے سے قربانی کا اہتمام کریں اس میں کسی طرح کی  رکاوٹ نہیں ہے ۔  ذبیحہ خانوں میں ، گھروں کے احاطے میں ، محفوظ مقامات میں پاکی صفائی کا خیال رکھتے ہوئے، قانون جن جن جانوروں کی اجازت دیتا ہے انہیں اللہ تعالٰی کی راہ میں قربان کریں۔


جامعہ فضیلت القرآن کے مہتم مولانا مطہر سراجی نے کہا کہ فرقہ پرست طاقتیں مسلمانوں کو نشانہ بنانے کیلئے بہانہ تلاش کرتی رہتی ہیں ۔ ایک جانب کورونا کی وبا پر قابو پانا ہے ، تو دوسری طرف فرقہ پرست طاقتوں کے ظلم اور زیادتیوں کو بھی روکنا ہے ۔ اس لئے مسلمان بڑے جانوروں کی مشترکہ قربانی سے گریز کریں ۔ انہوں نے کہا کہ بنگلورو اور کرناٹک کے اہم دینی مدارس نے اس سال مشترکہ قربانی کا اہتمام نہ کرنے کا فیصلہ لیا ہے ۔ مولانا مطہر سراجی نے کہا کہ قربانی کے مطلوبہ اور غیر مطلوبہ حصوں کے نام پر ہونے والی دھوکہ دہی کو روکنے کیلئے بھی بیداری مہم چلائی جارہی ہے ۔


مولانا مطہر سراجی نے کہا کہ غیر مطلوبہ حصوں کیلئے شائع کئے جانے والے اشتہارات اور اعلانات پر بھروسہ کرنے سے پہلے لوگ تصدیق کرلیں ۔ کیوں کہ ماضی میں ایسے کئی واقعات پیش آئے ہیں جہاں غیر مطلوبہ حصوں کے نام پر عوام کو دھوکہ دیا گیا ہے ۔ سماجی کارکن ذوالفقار علی بھٹو نے کہا کہ بہار ، مغربی بنگال ، اڑیسہ ، آسام اور اترپردیش میں مشترکہ قربانی کا اشتہار اور اعلان بتا کر بنگلورو میں پیسہ جمع کیا جاتا ہے ۔ اس طرح کے کئی معاملات فرضی ثابت ہوئے ہیں ۔ مولانا مطہر سراجی نے کہا کہ نہ صرف غیر مطلوبہ بلکہ مطلوبہ حصوں میں بھی بدنظمی اور منافع کمانے کا رجحان عام ہوتا ہوا دکھائی دیتا ہے ۔

مولانا مطہر سراجی نے کہا کہ چند قصاب جانوروں کی مشترکہ قربانی کو منافع کمانے کا ذریعہ بنائے ہوئے ہیں ۔ مشترکہ قربانی میں حصہ لینے والوں کو نہ جانور دکھایا جاتا ہے اور نہ حصوں کی تقسیم میں شفافیت برتی جاتی ہے ۔ علما کرام نے مسلمانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ  کسی بھی صورت میں قربانی کے عظیم مقصد کو پامال ہونے نہ دیں ۔ حضرت ابراہیم علیہ السلام کی یہ سنت اللہ کو راضی کرنے کیلئے ہونی چاہئے ، حقیقت میں قربانی اور ایثار کے مقصد کو سمجھتے ہوئے ، حضور اقدس صلی اللہ علیہ و سلم  کے بتائے گئے طریقوں کے مطابق اللہ تعالٰی کی راہ میں جانور قربان کریں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 23, 2020 10:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading