உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Network18 Sanjeevani Telethon: کرشنا ایلا نے بوسٹر ڈوز کی حمایت کی، پونا والا نے کہا- میوٹیڈ ویریئنٹ پر کام کرتی ہے ویکسین

    ویکسینیشن کیمپین کی نایاب حصولیابیوں کا جشن منانے کے لئے نیٹ ورک 18 کے سنجیونی ٹیلی تھان پروگرام میں ادار پونا والا نے کہا، 2020 کے پہلے دن سے ہمارے سفر کو فالو کیا جا رہا ہے، جب تنظیم نے کووڈ-19 ویکسین کے پروڈکشن کے لئے آکسفورڈ اور پھر ایسٹرا جینیکا کے ساتھ پارٹنرشپ کی۔

    ویکسینیشن کیمپین کی نایاب حصولیابیوں کا جشن منانے کے لئے نیٹ ورک 18 کے سنجیونی ٹیلی تھان پروگرام میں ادار پونا والا نے کہا، 2020 کے پہلے دن سے ہمارے سفر کو فالو کیا جا رہا ہے، جب تنظیم نے کووڈ-19 ویکسین کے پروڈکشن کے لئے آکسفورڈ اور پھر ایسٹرا جینیکا کے ساتھ پارٹنرشپ کی۔

    ویکسینیشن کیمپین کی نایاب حصولیابیوں کا جشن منانے کے لئے نیٹ ورک 18 کے سنجیونی ٹیلی تھان پروگرام میں ادار پونا والا نے کہا، 2020 کے پہلے دن سے ہمارے سفر کو فالو کیا جا رہا ہے، جب تنظیم نے کووڈ-19 ویکسین کے پروڈکشن کے لئے آکسفورڈ اور پھر ایسٹرا جینیکا کے ساتھ پارٹنرشپ کی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: نیٹ ورک-18 نے کووڈ-19 ویکسینیشن کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کے لئے 7 اپریل، 2021 کو 'Sanjeevani - A Shot Of Life' مہم شروع کی تھی۔ وہیں ویکسینیشن مہم کی نایاب حصولیابیوں کا جشن منانے کے لئے نیٹ ورک -18 نے ایک پروگرام کا انعقاد کیا۔ اس موقع پر ویکسین بنانے والی کمپنی سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا (Serum Institute of India) کے سی او او ادار پونا والا (Adar Poonawalla) نے ہندوستان کے کووڈ-19 ویکسینیشن سامنا کئے گئے چیلنج کے بارے میں بات کی، جبکہ ویکسین بنانے والی بھارت بایوٹیک (Bharat Biotech) کے چیئرمین اور ایم ڈی ڈاکٹر کرشنا ایلا (Krishna Ella) نے بتایا کہ کیوں کسی کو میوٹیڈ ویریئنٹ اومیکران (Omicron) سے نہیں ڈرنا چاہئے۔

      ویکسینیشن کیمپین کی نایاب حصولیابیوں کا جشن منانے کے لئے نیٹ ورک 18 کے سنجیونی ٹیلی تھان پروگرام میں ادار پونا والا نے کہا، 2020 کے پہلے دن سے ہمارے سفر کو فالو کیا جا رہا ہے، جب تنظیم نے کووڈ-19 ویکسین کے پروڈکشن کے لئے آکسفورڈ اور پھر ایسٹرا جینیکا کے ساتھ پارٹنرشپ کی۔ ہم نے کئی چیلنجز کا سامنا کیا، جس میں صحیح پارٹنر، پونجی، رسک پر مینوفیکچرنگ، وقت سے پہلے ان سہولیات کی تعمیر اور پھر کورونا کی دوسری خطرناک لہر کے دوران پروڈکشن میں تیزی لانا شامل ہے۔ یہ ایک زبردست سفر رہا ہے‘۔



      ادار پونا والا نے ان افواہوں کے بارے میں بھی بات کی کہ ویکسین کووڈ-19 کے بھاری میوٹیڈ ویریئنٹ پر کام کرنے میں کامیاب رہیں گے۔ انہوں نے کہا، ’ابھی یقین کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے، معلوم نہیں کیوں لوگ وقت سے پہلے بیان دیتے ہیں۔ یہ خوف اور دہشت کے سبب بنتا ہے۔ آج کے ویکسین ویریئنٹ کے خلاف کام کرتے ہیں، اس نے ڈیلٹا کے خلاف کام کیا ہے۔ ہمیں 81 فیصد ایفیکسی ملی، ہیمیں اب نئے ویریئنٹ کے بارے میں بات کرنے کے لئے ڈیٹا کا انتظار کرنے کی ضرورت ہے۔ بہت ساری کمپنیاں اومیکران-اسپیسیفک ویکسین پر کام کر رہی ہیں، اگر ضرورت پڑی تو ہم اسے بوسٹر شاٹ کے طور پر بھی لانچ کریں گے‘۔


      کرشنا ایلا نے کہا کہ ان کی ٹیم ویکسین کو سبھی طرح کے ویریئنٹ سے لڑنے میں اہل بنانے کے عمل میں ہے۔ یہ سبھی وائرس میوٹیڈ ہوں گے اور میوٹیڈ ہونے کے لئے مجبور ہیں۔ جب ایک وائرس میں اتنے سارے میوٹیشن ہوتے ہیں تو وائرس کے زندہ رہنے کی فٹنس کم ہوجاتی ہے، جو آخر کار انسانوں کے لئے اچھی ہوجاتی ہے۔ یہ کم روگنجنک ہو رہا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: