ہوم » نیوز » وطن نامہ

CAA اور NRC کو لیکر بہار کے سبزی باغ میں خواتین کا احتجاج جاری

سبزی باغ میں شاہین باغ کی طرح شروع ہوا احتجاج اب بہار کے دوسرے ضلعوں میں پہنچ گیا ہے۔ گیا، دربھنگہ، کشن گنج کے علاوہ کئ ضلعوں میں ہورہا ہے خواتین کا احتجاج۔

  • Share this:
CAA اور NRC کو لیکر بہار کے سبزی باغ میں خواتین کا احتجاج جاری
سبزی باغ میں شاہین باغ کی طرح شروع ہوا احتجاج اب بہار کے دوسرے ضلعوں میں پہنچ گیا ہے۔ گیا، دربھنگہ، کشن گنج کے علاوہ کئ ضلعوں میں ہورہا ہے خواتین کا احتجاج۔

سی اے اے، این پی آر اور این آرسی پر پٹنہ کے سبزی باغ میں خواتین کا احتجاج جاری ہے۔ شاہین باغ کی طرح سبزی باغ میں ہورہے احتجاج میں بڑی تعداد میں خواتین شرکت کرہی ہیں۔ سخت سردی میں بھی خواتین کا حوصلہ پست نہیں ہوا ہے۔ احتجاج میں سبھی عمر کی خواتین کے ساتھ ہی شہر کے عام لوگ شرکت کررہے ہیں۔ روزانہ شام میں احتجاج کی حمایت کرنے سیاسی، سماجی، مزہبی رہنماؤں کی شرکت ہوتی ہے۔ طلباء کی کثیر تعداد احتجاج میں جان ڈالنے کا کام کرتی ہے۔ طلباء لوگوں کے حوصلہ کو بڑھاتے ہیں۔ سبزی باغ کا علاقہ چونکہ تجارتی مراکز کے طور پر جانا جاتا ہے لیہزا دکاندار بھی خواتین کے احتجاج کا حصہ بن رہے ہیں۔ احتجاج میں سبھی طبقہ کے لوگوں کی شرکت ہورہی ہے۔ نیوز اٹین سے بات کرتے ہوئے خواتین نے واضح کیا ہیکہ ان کا احتجاج اس وقت تک جاری رہےگا جب تک کی حکومت انکی مانگ کو مان نہ لے۔

پٹنہ کے سبزی باغ کی طرح عالم گنج اور ہارون نگر میں بھی خواتین کا احتجاج ہورہا ہے۔ عالم گنج پٹنہ سیٹی میں ہے اور شہر کی پورانی آبادی سی اے اے اور این آر سی کے خلاف میدان میں کھڑی ہوگئ ہے۔ وہیں ہارون نگر میں خواتین کئ دنوں سے احتجاج کررہی ہیں۔ بچوں کے ساتھ دھرنا پر گھنٹوں بیٹھتی ہیں اور اس قانون کے خلاف نعرہ لگاتی ہیں۔ شاہین باغ ایک آڈیل بنا ہے اور شاہین باغ کے احتجاج کو پٹنہ سے خواتین مضبوط بنانے کی کوشش کرتی نظر آرہی ہیں۔

اسی طرح گیا ضلع کے شانتی باغ میں ۲۲ دنوں سے خواتین کا احتجاج چل رہا ہے۔ گیا میں اس قانون کے خلاف پورا شہر شانتی باغ کا رخ کرنے لگا ہے۔ جہاں بڑے بڑے سیاسی لیڈر شانتی باغ میں آکر خطاب کررہے ہیں۔

دربھنگہ کے لال باغ میں کل سے خواتین کا احتجاج شروع ہوا ہے۔ دربھنگہ اقلیتی ضلع ہے جہاں مسلمانوں کی بڑی آبادی ہے، شہر کا مزاج قومی یکجہتی کو فروغ دینے والا رہا ہے۔ آل انڈیا مسلم بیداری کارواں کے صدر نظر عالم کے مطابق دربھنگہ میں سبھی مزاہب کے لوگ خواتین کے احتجاج کی حمایت کررہے ہیں۔ نظر عالم نے بتایا کی احتجاج اس وقت تک جاری رہےگا جب تک کی حکومت انکے مطالبات کو مان نہ لے۔ نظر عالم نے صوبہ کی نتیش حکومت کو بھی کٹگھرے میں کھڑا کیا ہے۔ انکے مطابق نتیش کمار سی اے اے کی حمایت کرتے ہیں وہیں دوسری طرف اسمبلی انتخاب کو دیکھتے ہوئے این آر سی کو صوبہ میں لاگو نہیں کرنے کی بات کرتے ہیں، جو محض ایک دھوکہ ہے۔

First published: Jan 19, 2020 03:49 PM IST