ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

بی جے پی رام مندر- بابری مسجد تنازع کا حل عدالت سے نہیں بلکہ آئین میں ترمیم کرکے کرنا چاہتی ہے : مولانا اسرار الحق

گلبرگہ : بہار کے کشن گنج سے کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ مولانا اسرار الحق قاسمی کا کہنا ہے کہ بی جے پی رام مندر -بابری مسجد تنازع کا حل عدالت سے نہیں بلکہ آئین میں ترمیم کرکے کرنا چاہتی ہے۔ اس کے لئے وہ راجیہ سبھا میں اکثریت لانے کیلئے مختلف ریاستوں میں اقتدارحاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

  • ETV
  • Last Updated: Jan 04, 2016 10:34 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بی جے پی رام مندر- بابری مسجد تنازع کا حل عدالت سے نہیں بلکہ آئین میں ترمیم کرکے کرنا چاہتی ہے : مولانا اسرار الحق
گلبرگہ : بہار کے کشن گنج سے کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ مولانا اسرار الحق قاسمی کا کہنا ہے کہ بی جے پی رام مندر -بابری مسجد تنازع کا حل عدالت سے نہیں بلکہ آئین میں ترمیم کرکے کرنا چاہتی ہے۔ اس کے لئے وہ راجیہ سبھا میں اکثریت لانے کیلئے مختلف ریاستوں میں اقتدارحاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

گلبرگہ : بہار کے کشن گنج سے کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ مولانا اسرار الحق قاسمی کا کہنا ہے کہ بی جے پی رام مندر -بابری مسجد تنازع کا حل عدالت سے نہیں بلکہ آئین میں ترمیم کرکے کرنا چاہتی ہے۔ اس کے لئے وہ راجیہ سبھا میں اکثریت لانے کیلئے مختلف ریاستوں میں اقتدارحاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔


مولانا قاسمی کا کہنا ہے کہ یوپی انتخابات سے قبل رام مندر کا مسئلہ اچانک سے اٹھانا بھی بی جے پی کی اسی سمت میں ایک کوشش کی۔


مولانا اسرار الحق قاسمی نے کہا کہ رواداری کے موضوع پر وزیر اعظم مودی دوہرا معیار اپنا ئے ہوئے ہیں۔بی جے پی لیڈروں کے بیانوں کو وزیر اعظم کی خاموش پشت پناہی حاصل ہے۔ لیکن بہار انتخابات کے نتائج نے فرقہ پرستوں کی سوچ پر پانی پھیر دیا ہے ۔


مولانا نے کہا کہ مذہبی پیشوائوں کے خلاف اشتعال انگیزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے۔ اس کے لیے بین الاقوامی سطح پر قانون بنائے جانے کی ضرورت ہے۔

First published: Jan 04, 2016 10:33 PM IST