உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    چنئی کچرے کے شہر میں تبدیل ، بیماریوں کی روک تھام کیلئے اقدامات شروع

    چنئی: سیلاب سے شدید طور پر متاثر چنئی کچرے کے شہر میں تبدیل ہوگیا ہے کیونکہ سیلاب کے پانی کی بتدریج کمی کے بعد ہر طرف کیچڑ اور کچرا نظر آرہا ہے ۔ متاثرین کا برا حال ہے ۔

    چنئی: سیلاب سے شدید طور پر متاثر چنئی کچرے کے شہر میں تبدیل ہوگیا ہے کیونکہ سیلاب کے پانی کی بتدریج کمی کے بعد ہر طرف کیچڑ اور کچرا نظر آرہا ہے ۔ متاثرین کا برا حال ہے ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      چنئی: سیلاب سے شدید طور پر متاثر چنئی کچرے کے شہر میں تبدیل ہوگیا ہے کیونکہ سیلاب کے پانی کی بتدریج کمی کے بعد ہر طرف کیچڑ اور کچرا نظر آرہا ہے ۔ متاثرین کا برا حال ہے ۔


      متاثرین نے پریشانی سناتے ہوئے کہا کہ ان کے مسائل حل کرنے والا کوئی نہیں ہے ۔ کئی علاقوں میں اب تک بجلی کی سپلائی بحال نہیں کی جاسکی ۔ اور کئی دور دراز کے علاقوں میں بچاؤ ٹیمیں اب تک نہیں پہنچ پائیں ۔ کئی علاقوں میں پینے کا پانی اور کھانے کیلئے غذا کے علاوہ چھوٹے بچوں کیلئے دودھ بھی نہیں ہے ۔


      ادھر چنئی میں پانی سے پیدا ہونے والی بیماریوں کو روکنے کیلئے حکام اقدامات کر رہے ہیں۔چنئی میں بارش کی وجہ سے تقریباً 400 افراد ہلاک اور ہزاروں بے گھر ہوئے ہیں۔ تمل ناڈو کا دارالحکومت بارش کی وجہ سے عملاً زیرآب آچکا ہے۔ ندیاں خطرے کے نشان سے اوپر بہہ رہی ہیں۔ سرکاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ راحت کاری کے کام انجام دینے کے علاوہ مزید 200 اسپیشل میڈیکل کیمپ بھی قائم کئے جارہے ہیں۔


      محکمہ موسمیات نے بتایا کہ چنئی میں ایک اور طوفانی بارش کا خطرہ ہے۔ شہریوں کو اندیشہ ہے کہ اگر بارش شروع ہوئی تو کئی ندیاں ابل پڑیں گی اور تباہی مچے گی۔ بارش کی وجہ سے مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے۔ پانی کی ایک بوتل 50 تا 100 روپئے میں دستیاب ہے ۔بینکس بھی کھول دیئے گئے ہیں۔

      First published: