ہوم » نیوز » وطن نامہ

چین کی چال بازی جاری ، ایل اے سی پر جدید ہتھیاروں سے لیس کئے فوجی جوان

China PLA Weapons Rocket Launcher:چین نے مشرقی لداخ میں ملٹی بیرل راکٹ لانچر PHL-11 122 mm تعینات کئے ہیں ۔ یہ ایک مرتبہ میں 40 راکٹس داغ سکتا ہے ۔

  • Share this:
چین کی چال بازی جاری ، ایل اے سی پر جدید ہتھیاروں سے لیس کئے فوجی جوان
چین کی چال بازی جاری ، ایل اے سی پر جدید ہتھیاروں سے لیس کئے فوجی جوان

نئی دہلی : ہندوستان اور چین کے درمیان لداخ میں گزشتہ ایک سال سے جاری رسہ کشی ابھی بھی برقرار ہے ۔ کشیدگی بھلے ہی کم ہوگئی ہو، لیکن چین کو گزشتہ ایک سال کے اندر ہندوستان کی طاقت کا احساس ضروری ہوگیا ہے ۔ لہذا اس نے ایل اے سی پر تعینات فوجیوں کو نئے ہتھیاروں سے لیس کردیا ہے ۔ گزشتہ سال گرمیوں میں مشرقی لداخ میں جو تنازع شروع ہوا تھا ، وہ ابھی جاری ہے ۔ جو چینی فوج سردیوں کے موسم میں پٹرولنگ تو دور ، اپنے بنکروں سے باہر تک نہیں نکلتے تھے ، وہ پوری سردی ایل اے سی پر بیٹھے رہے ۔ اس ایک سال میں چین نے ہندوستانی فوج کی طاقت سے سبق لیتے ہوئے اس کا توڑ بھی نکالنا شروع کردیا ہے ۔


ذرائع کے مطابق ہندوستانی فوج کی آرٹیلری میں شامل ملٹی بیرل راکٹ لانچر BM-21 گریڈ ایل اے سی پر تعینات ہے ۔ لہذا چین نے بھی مشرقی لداخ میں ملٹی بیرل راکٹ لانچر PHL-11 122 mm تعینات کئے ہیں ۔ یہ ایک مرتبہ میں 40 راکٹس داغ سکتا ہے ۔ حال ہی میں اس کی مشق چین نے تبت خود مختار علاقہ میں کیا ہے ۔ اس لانچر میں 122 mm کے راکٹ لگے ہیں ۔ یہ ایک سیلف پروپیلڈ راکٹ لانچر ہے ۔ اس کو چینی فوج کی بیک بون کے طور پر دیکھا جاتا ہے ۔


یہی نہیں ، چین تو مشرقی لداخ میں اب تک استعمال میں لائے جارہے آرمڈ ٹائپ 63 آرمرڈ پرسن کیریئر کو نئے ZBL-09 جسے اسنو لیپیرڈ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ، اس کو بدلنے جا رہا ہے ۔ اس بختر بند گاڑی میں تین عملہ اور سات سے 10 فوجیوں کے بیٹھنے کی جگہ ہے ۔ اس گاڑی میں پیچھے دروازہ ہے اور اگر ایمرجنسی میں اس سے نکلنا ہو تو اس گاڑی کے اوپر سے نکلا جاسکتا ہے ۔ اس وہیکل کے اندر بیٹھے فوجیوں کیلئے فائرنگ پٹ بھی ہے ، جہاں سے گولیاں بھی داغی جاسکتی ہیں ۔ اس وہیکل کی مین گن 30 mm کی ہے ، تو ایک 7.62 mm کی مشین گن بھی لگی ہوئی ہے ۔ اس کامبیٹ وہیکل میں دو اینٹی ٹینک گائیڈیڈ میزائل بھی لگی ہیں ۔


وہیں مشرقی لداخ کے علاقوں میں اپنے سازو سامان اور رسد کو ہر موسم میں دوردراز مقامات تک لے جانے کیلئے چین کی فوج نے ایک خاص آل ٹیرن وہیکل کو شامل کیا ہے ، جو کہ طویل دوری کے لاجسٹک سپورٹ مشن کیلئے پوری طرح سے فٹ ہیں ۔ یہ پانچ ہزار میٹر یعنی کہ 16000 فٹ کی اونچائی پر آسانی سے کام کرسکتی ہے ۔ اس سے خاص طور پر پلاٹو کیلئے تیار کیا گیا ہے اور یہ ایک مرتبہ میں 1.5 ٹن سامان لے جاسکتی ہے ۔ اس گاڑی کو 35 ڈگری اینگل والی اونچائی میں بھی آسانی سے چڑھایا جاسکتا ہے ۔