ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

’ٹربل شوٹر‘ ڈی کے شیوکمار کو اب کانگریس نے بنایا کرناٹک کا صدر

وکلیگا طبقہ سے تعلق رکھنے والے ڈی کے شیو کمار کانگریس پارٹی کے ایک مضبوط اور جوشیلے لیڈرسمجھے جاتےہیں۔

  • Share this:
’ٹربل شوٹر‘ ڈی کے شیوکمار کو اب کانگریس نے بنایا کرناٹک کا صدر
’ٹربل شوٹر‘ ڈی کے شیوکمار کو اب کانگریس نے بنایا کرناٹک کا صدر

بنگلورو۔ آخرکار کرناٹک میں کانگریس پارٹی کیلئے نئے عہدیداروں کی نامزدگی عمل میں آ گئی ہے۔ اے آئی سی سی نے ڈی کے شیوکمار کو پردیش کانگریس کمیٹی کا صدرنامزد کیا ہے۔ وکلیگا طبقہ سے تعلق رکھنے والے ڈی کے شیو کمار کانگریس پارٹی کے ایک مضبوط اور جوشیلے لیڈرسمجھے جاتےہیں۔ وہیں، اے آئی سی سی نے پردیش کانگریس کمیٹی کیلئے تین کارگذار صدر نامزد کئے ہیں۔ سابق رکن کونسل اور کانگریس کے سینئر لیڈر سلیم احمد، ستیش جارکی ہولی اور ایشور کھنڈرے کو کارگذار صدر کے طور پرنامزدکیا گیا ہے۔


دوسری جانب سابق وزیراعلی سدارامیا کو دوعہدوں پربرقرار رکھا گیا ہے۔ اپوزیشن لیڈر اور سی ایل پی لیڈر کے عہدے پر سدارامیا برقرار رہیں گے۔ اجئے سنگھ کو اسمبلی میں پارٹی کے چیف وہپ اور ایم نارائن سوامی کو کونسل میں چیف وہپ کے عہدے کیلئے نامزد کیاگیا ہے۔ اس طرح طویل انتظار کے بعدکرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی کی از سرنو تشکیل ہوئی ہے۔واضح رہے کہ دنیش گنڈوراؤ کی جگہ پارٹی نے ڈی کے شیوکمار کو اب پردیش کانگریس کمیٹی کی کمان سونپی ہے۔



ڈی کے شیوکمار سات مرتبہ رکن اسمبلی منتخب ہوئے ہیں۔ کانگریس کی سابقہ حکومتوں میں اہم عہدوں پر فائز رہے ہیں۔ ڈی کے شیوکمار کو ٹربل شوٹر کے طور پرجانا جاتا ہے۔ یعنی جب بھی پارٹی کیلئے مشکلات پیدا ہوتی ہیں تو ڈی کے شیو کمار کو اہم ذمہ داری سونپی جاتی ہے۔ نہ صرف کرناٹک بلکہ مہاراشٹر اور گجرات میں سیاسی ہلچل کے دوران کانگریس ایم ایل ایز کی حفاظت کی ذمہ داری ڈی کے شیوکمار کو ماضی میں سونپی گئی تھی۔ سال2018 کے اسمبلی انتخابات کے بعد کرناٹک میں کانگریس اور جے ڈی ایس مخلوط حکومت کے قیام میں ڈی کے شیوکمار نے اہم رول ادا کیا تھا۔ اب جب کہ کرناٹک میں کانگریس پارٹی کا اثر ورسوخ دن بدن کم ہو رہاہے، 2019کے لوک سبھا انتخابات اور چند ماہ قبل ہوئے اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں کانگریس پارٹی کو کراری شکست ہوئی ہے۔

اس نازک دور میں اے آئی سی سی نے پارٹی کے مضبوط لیڈر کو پردیش کانگریس کمیٹی کا کپتان بنایا ہے۔ ڈی کے شیوکمار گزشتہ سال قومی سطح پر سرخیوں میں رہے۔ حوالہ معاملے میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے ڈی کے شیوکمار کو دہلی میں گرفتار کیا تھا۔ کئی دنوں تک جیل میں رہنے کے بعد انہیں عدالت سے ضمانت ملی۔ اس پورے معاملے میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان خوب سیاست دیکھنے کو ملی تھی۔
First published: Mar 11, 2020 06:55 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading