ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

پی چدمبرم کی آرمی چیف جنرل راوت پر تنقید، کہا- اپنے کام سے مطللب رکھیں

سابق مرکزی وزیر نے یہ الزام بھی لگایا کہ فوجی سربراہ اور اترپردیش کےڈی جی پی کو حکومت کی حمایت کرنےکوکہا گیا اوریہ'شرمناک' ہے۔

  • Share this:
پی چدمبرم کی آرمی چیف جنرل راوت پر تنقید، کہا- اپنے کام سے مطللب رکھیں
پی چدمبرم کی آرمی چیف جنرل راوت پر تنقید۔ تصویر: پی ٹی آئی

ترواننت پورم: کانگریس کےسینئر لیڈرپی چدمبرم نےہفتہ کوفوجی سربراہ جنرل بپن راوت پر سخت تنقید کرتے ہوئےان سےاپنےکام سے مطلب رکھنےکوکہا۔ جنرل راوت نے حال ہی میں شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کے خلاف پُرتشدداحتجاج کرنے والےلوگوں کی تنقید کی تھی۔ سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نئے قانون کے خلاف کیرلا پردیش کانگریس کمیٹی کے ذریعہ یہاں راج بھون کے سامنے منعقدہ مہا ریلی کوخطاب کررہے تھے۔ انہوں نےیہ الزام بھی لگایا کہ فوجی سربراہ اوراترپردیش کےڈائریکٹرجنرل آف پولیس (ڈی جی پی) کو حکومت کی حمایت کرنےکوکہا گیا اوریہ 'شرمناک' ہے۔


جنرل راوت فوج کی قیادت کریں: پی چدمبرم


پی چدمبرم نے کہا، 'اب، آرمی جنرل کو بولنے کےلئےکہا جارہا ہے۔ کیا یہ آرمی جنرل کا کام ہے'؟ انہوں نےکہا، "ڈی جی پی... فوج کے جنرل کوحکومت کی حمایت کرنے کےلئےکہا جارہا ہے۔ یہ شرمناک ہے۔ میں جنرل راوت سے اپیل کرتا ہوں، آپ فوج کی قیادت کریں اوراپنے کام سے مطلب رکھیں۔ لیڈروں کو جوکرنا ہے، وہ کریں گے'۔ پی چدمبرم نے کہا، 'یہ فوج کا کام نہیں ہے کہ وہ لیڈروں کو یہ بتائے کہ ہمیں کیا کرنا چاہئے۔ جنگ کیسے لڑا جائے، آپ کو یہ بتانا ہمارا کام نہیں ہے۔ آپ اپنے خیالات کے مطابق جنگ لڑیں اورہم ملک کی سیاست کو سنبھالیں گے'۔




بپن راوت نے یہ بات کہی تھی

واضح رہے کہ ملک میں سی اے اے، این آرسی پرچل رہے احتجاجی مظاہرہ پرجواب دیتے ہوئے بپن راوت نے کہا تھا، 'لیڈروہ نہیں ہیں جونامناسب سمت میں لوگوں کی قیادت کرتے ہیں، جیسا کہ ہم بڑی تعداد میں یونیورسٹی اور کالج کے طلباء کو دیکھ رہے ہیں، جس طرح وہ شہروں اورقصبوں میں آگ زنی اورتشدد کرنے میں بھیڑ کی قیادت کررہے ہیں، یہ قیادت نہیں ہے'۔ انہوں نے یہ بھی کہا تھا 'لیڈروہ ہے جو آپ کی صحیح سمت میں لے جاتا ہے، آپ کو صحیح مشورہ دیتا ہے اوریہ یقینی بناتا ہے کہ وہ جن کی قیادت کررہا ہے، ان کی پرواہ کرتا ہے'۔ جنرل راوت 31 دسمبرکو فوج کے سربراہ کے عہدے سے ریٹائرہونے والے ہیں۔ انہیں ملک کا پہلا چیف آف ڈیفنس اسٹاف بنائے جانے کا امکان ہے۔ جنرل راوت نے فوج کے سربراہ کے طورپراپنے تین سال کی مدت کارکے دوران سیاسی طورپرغیرجانبدار نہ رہنے کے الزامات کا سامنا کیا۔
First published: Dec 28, 2019 06:22 PM IST