ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

آرایس ایس سے وابستہ نئے پروٹم اسپیکر کے خلاف کانگریس نے لی سپریم کورٹ میں پناہ

سینئرٹی کو نظرانداز کرتے ہوئے بی جے پی نے کے جی بوپیا کو پروٹم اسپیکر بنایا ہے، لیکن کانگریس نے اس کی مخالفت کرتے ہوئے سپریم کوٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ہے۔ کانگریس نے اس موضوع پر فوری سماعت کا مطالبہ کیا ہے۔

  • Share this:
آرایس ایس سے وابستہ نئے پروٹم اسپیکر کے خلاف کانگریس نے لی سپریم کورٹ میں پناہ
ہلاک عشرت اور نشاط کی فائل فوٹو

بنگلورو: سینئرٹی کو نظرانداز کرتے ہوئے بی جے پی نے  کے جی بوپیا کو پروٹم اسپیکر بنایا ہے، لیکن کانگریس نے اس کی مخالفت کرتے ہوئے سپریم کوٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ہے۔ کانگریس نے اس موضوع پر فوری سماعت کا مطالبہ کیا ہے۔ اس درمیان کانگریس نےایک مبینہ آڈیو ٹیپ ریلیز کیا ہے جہاں جناردن ریڈی کانگریس کے ممبراسمبلی کو رشوت دینے کی پیشکش کررہے ہیں۔


سینئرٹی کو نظر انداز کرتے ہوئے بی جے پی نے بوپیاکو پروٹم اسپیکر بنایا ہے، لیکن کانگریس نے اس کی مخالفت کرتے ہوئے سپریم کورٹ میں فوراً سماعت کئے جانے کا مطالبہ کیاہے۔


اس سے قبل کرناٹک کے گورنر ویجوبھائی والا نے پروٹم اسپیکرکے لئے سب سے سینئر ممبراسمبلی آر وی دیش پانڈے کو نظر انداز کرکے ایک ایسے ممبراسمبلی کے جی بوپیا کو پروٹم اسپیکر بنا دیا ہے، جو نہ صرف سینئرٹی میں نیچے ہیں بلکہ بی جے پی کے ممبراسمبلی بھی ہیں۔ بکو پیا ایسے متنازعہ سابق اسپیکر ہیں، جن کے فیصلے کی تنقید سپریم کورٹ نے خود کی تھی۔


دراصل بوپیا بچپن سے ہی راشٹریہ سیوم سیوک سنگھ (آرایس ایس) کے رکن رہے ہیں۔ وہ اکھل بھارتیہ ویارتھی پریشد (اے بی وی پی) کے فعال رکن رہے ہیں۔ ایمرجنسی میں انہیں گرفتار کیا گیا تھا۔ اسپیکر کے طور پر انہوں نے سال 2011 میں یدی یورپا کے خلاف بغاوت کرنے والے بی جے پی کے 11 ممبران اسمبلی کو نااہل قرار دے کر یدی یورپا کی حکومت کو نئی زندگی دے چکے ہیں۔ بعد میں ان کے فیصلے کو کرناٹک ہائی کورٹ نے تبدیل کردیا تھا۔ سپریم کورٹ نے ان کے کام کی تنقید بھی کی تھی۔

 

ریاستی اسمبلی میں  نئی اسمبلی کی کارروائی کو بہتر طریقے سے چلانے کے لئے پروٹم اسپیکر کی تقرری کی جاتی ہے، جو ابتدائی طور پر اس کے کاموں کو دیکھتا ہے۔ نئے ممبران اسمبلی کو حلف دلاتا ہے اور اگر طاقت کی آزمائش کی ضرورت پڑے تو یہ کام اسی کی نگرانی میں ہوتا ہے، جیسا کہ کرناٹک اسمبلی میں ہفتہ کی شام کو ہونا ہے۔ اس کارروائی کو چلانے کی ذمہ داری نئے پروٹم اسپیکر کی ہی رہے گی۔

اس سے قبل کرناٹک کے گورنر کے ذریعہ بی جے پی کو حکومت بنانے کی دعوت دینے کے خلاف کانگریس جے ڈی ایس کی عرضی پر سپریم کورٹ نے فیصلہ سنایا۔فریقین کی دلیل سننے کے بعد کورٹ نے کل شام 4 بجے فلور ٹسٹ کرانے کا حکم دیاہے۔

سینئر وکیل مکل روہتگی نے بی ایس یدی یورپا نے ممبران اسمبلی کی حمایت کا دعوی کیا تھا۔ حالانکہ کورٹ میں پیش بی جے پی کے لیٹر میں ممبران اسمبلی کے دستخط نہیں تھے، جبکہ کانگریس نے ممبران اسمبلی کے دستخط والا لیٹر سونپا۔

واضح رہے کہ کرناٹک میں سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری بی جے پی کے لیڈر بی ایس یدی یورپا نے تنازعات کے درمیان ہی کل جمعرات کو وزیراعلیٰ عہدے کا حلف لیا۔ گورنر ویجو بھائی والا نے اکثریت ثابت کرنے والے کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کو حکومت بنانے کے لئے مدعو نہیں کیا، جسے لے کر دونوں پارٹیاں ناراض ہیں۔

کانگریس نے گورنر کے فیصلے کو جمہوریت کا قتل بتایا ہے۔ اس درمیان خریدوفروخت کے خدشات کو دیکھتے ہوئے کانگریس اور جے ڈی ایس نے سبھی ممبران کو حیدرآباد بھیج دیا ہے۔

 
First published: May 18, 2018 08:35 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading