ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

حیدرآباد : گاندھی اسپتال سے کورونا مریض لا پتہ ، مچا ہنگامہ ، اٹھ رہے کئی سوالات

پرانے شہر حیدرآباد کے دھول پیٹ کے 49 سالہ کورونا سے متاثر شخص کو 30 مئی کو گاندھی استپال میں داخل کروایا گیا تھا ۔

  • Share this:
حیدرآباد : گاندھی اسپتال سے کورونا مریض لا پتہ ، مچا ہنگامہ ، اٹھ رہے کئی سوالات
حیدرآباد : گاندھی اسپتال سے کورونا مریض لا پتہ ، مچا ہنگامہ ، اٹھے رہے کئی سوالات

پوری ریاست تلنگانہ میں کورونا کے مریضوں کےعلاج کیلئے واحد مخصوص گاندھی جنرل اسپتال وسائل سے زیادہ مریضوں کی تعداد ، جونئیر ڈاکٹرس کی ہڑتال ، مریضوں کی دیکھ بھال میں لاپروائی اور صفائی کے ناقص انتظامات کے لئے مسلسل خبروں میں ہے ۔ تین دن پہلے اسپتال انتظامیہ نے تکفین کے لیے ایک مریض کی لاش کو دوسرے مریض کے گھر والوں کے حوالے کردیا تھا اور اب اس کے بعد گاندھی اسپتال کی بد انتظامی کا ایک اور واقعہ سامنے آیا ہے ۔


پرانے شہر حیدرآباد کے دھول پیٹ کے 49 سالہ کورونا سے متاثر شخص نریندر سنگھ کو 30 مئی کو گاندھی استپال میں داخل کروایا گیا تھا ۔ گمشدہ نریندر کے بھائی مکیش سنگھ  نے کہا کہ نریندر نے 31 مئی کو آخری بار  فون پر رابطہ قائم کیا تھا ۔ فون پر رابطہ نہ ہونے پر جب ان کے رشتہِ داروں نے اسپتال سے رابطہ کیا تو معلوم ہوا کہ وہ اسپتال میں موجود ہی نہیں ہے ۔




ہائی سیکورٹی کی سہولتوں سے لیس سمجھے جانے والے گاندھی استپال سے ایک کووڈ مریض کی گمشدگی کی خبر نہ صرف ان کے خاندان بلکہ عوام کے لیے بھی تشویش ناک ہے ۔ سیاسی جماعت مجلس بچاؤ تحریک کے ترجمان امجد اللّٰہ خان کووڈ 19 کے مریض نریندر سنگھ کی گاندھی اسپتال سے گمشدگی پر کہا کہ یہ نہ صرف اسپتال انتظامیہ بلکہ ریاستی حکومت کی اہلیت پر سوالیہ نشان ہے ۔

انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ حکومت  گاندھی اسپتال میں سی سی ٹی وی کیمروں  کا انتظام یقینی نہیں بنا سکی ۔ ان کے خراب ہونے کی وجہ سے پولیس کو نریندر کی تفتیش میں کوئی مدد نہیں مل سکی ۔ کورونا کے مریض نریندر سنگھ کو گاندھی اسپتال سے غائب ہوئے 13 دن ہو چکے ہیں ۔ ان کے رشتے دار انہیں تلاش کرنے کی لگاتار کوشش کررہے ہیں ، لیکن اب تک کچھ پتہ نہیں چلا ہے ۔ تلنگانہ کی ریاستی حکومت سے مطالبہ ہے کہ اس مریض کو تلاش کرنے کیلئے خصوصی ٹیم تشکیل دی جائے ۔
First published: Jun 14, 2020 10:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading