ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

مندر میں آشیر واد لینے آئی خاتون کے ساتھ ہوا یہ گھنونا کام

پولیس کے مطابق پنجاب میں ضلع موگا ضلع کی رہنے والی تقریباََ 25 سالہ متاثرہ نے پولیس میں درج کرائی رپورٹ میں بتایا کہ اس کی شادی کو چار سال ہو گئے ہیں۔ اس کے اولاد نہیں ہے۔ اولاد کی خواہش سے وہ راوت سر کے بابا كھیترپال مندر میں آشیر واد کے لئے آتی رہتی ہے۔

  • Share this:
مندر میں آشیر واد لینے آئی خاتون کے ساتھ ہوا یہ گھنونا کام
پولیس کے مطابق پنجاب میں ضلع موگا ضلع کی رہنے والی تقریباََ 25 سالہ متاثرہ نے پولیس میں درج کرائی رپورٹ میں بتایا کہ اس کی شادی کو چار سال ہو گئے ہیں۔ اس کے اولاد نہیں ہے۔ اولاد کی خواہش سے وہ راوت سر کے بابا كھیترپال مندر میں آشیر واد کے لئے آتی رہتی ہے۔

راجستھان میں ضلع ہنومان گڑھ کے راوت سر قصبے میں پنجاب سے مندر میں آشیر واد لینے آئی ایک خاتون کی ایک شخص کی جانب سے دھمکی دے کر عصمت دری کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ پولیس کے مطابق پنجاب میں ضلع موگا ضلع کی رہنے والی تقریباََ 25 سالہ متاثرہ نے پولیس میں درج کرائی رپورٹ میں بتایا کہ اس کی شادی کو چار سال ہو گئے ہیں۔ اس کے اولاد نہیں ہے۔ اولاد کی خواہش سے وہ راوت سر کے بابا كھیترپال مندر میں آشیر واد کے لئے آتی رہتی ہے۔

گزشتہ جمعرات کو وہ مندر میں درشن کرنے آئی تو وہاں مندر کے نزدیک رادھاكرش نامی شخص سے اس کی جان پہچان ہوئی۔ متاثرہ نے بتایا کہ وہ گھروں میں برتن اور صفائی کا کام کرتی ہے۔ ملزم رادھاكرش نے اسے کام دلانے کا کہہ کر کار میں بٹھا کر کسی اینٹ بھٹے پر بنے کمرے میں لے گیا جہاں پر اسے جان سے مارنے کی دھمکی دے کر اس کی عصمت دری کی۔

پولیس نے معاملہ درج کر کے آج متاثرہ کی میڈیکل جانچ کرائی ہے۔ پولیس ملزم رادھاكرش کی موبائل فون نمبر سے تلاش کر رہی ہے ۔ پولیس جائے وقوعہ کا بھی پتہ لگا رہی ہے کہ کون سے اینٹ بھٹے پر اس خاتون کی عصمت دری ہوئی ہے۔

First published: Feb 29, 2020 03:42 PM IST