ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

شرمناک: گاؤں کی کالی پہاڑی میں نابالغ کے ساتھ 4 لوگوں نے مسلسل 3 دن تک کیا انتہائی گھنونا کام

پولیس نے فوراً کارروائی کرتے ہوئے موقع پر پہنچ کر متاثرہ کو آزاد کرایا۔ پولیس نے متاثرہ لڑکی کا میڈیکل کرواکر پوکسو ایکٹ کے تحت ملزموں کے خلاف کیس درج کرلیا ہے۔ پولیس فرار چاروں ملزموں کی تلاش کررہی ہے۔

  • Share this:
شرمناک: گاؤں کی کالی پہاڑی میں نابالغ کے ساتھ 4 لوگوں نے مسلسل 3 دن تک کیا انتہائی گھنونا کام
علامتی تصویر۔

راجستھان کے الور میں نابالغ لڑکی کی اجتماعی عصمت دری کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ الزاموں کے مطابق یہاں کے تجارا تھانہ علاقے میں چار شخص ایک نابالغ لڑکی کو اغواکرکے اپنے ساتھ لے گئے اور تین دن تک الگ۔الگ مقامات پر جاکر اس کی اجتماعی عصمت دری کی۔ نابالغ لڑکی سے گینگ ریپ کی اطلاع پر پولیس میں ہنگامہ مچ گیا۔ پولیس نے فوراً کارروائی کرتے ہوئے موقع پر پہنچ کر متاثرہ کو آزاد کرایا۔ پولیس نے متاثرہ لڑکی کا میڈیکل کرواکر پوکسو ایکٹ کے تحت ملزموں کے خلاف کیس درج کرلیا ہے۔ پولیس فرار چاروں ملزموں کی تلاش کررہی ہے۔


تجارا کے تھانہ آفیسر جتیندر ناوریا نے بتایا کہ اس سلسلسے میں متاثرہ نے شکایت درج کرائی ہے۔ شکایت کے مطابق 26 جنوری کو ان کی 13 سالہ بیٹی کھیت پر گئی تھی۔ دوپہر تقریبا 2 بچے ثاقب مقامی ارنڈکا اور اس کے 3 ساتھی لڑکی کو اغوا کرکے لے گئے۔ اس کے بعد ملزموں نے ارنڈکا گاؤں کی کالی پہاڑی میں نابالغ کے ساتھ اس گھنونے کام کو انجام دیا۔ ملزموں نے بچی کو خورشی مقامی ارنڈکا کے گھر لاکر یرغمال بنا لیا۔ وہاں  بھی چاروں ملزموں نے بچی کا باری۔باری ریپ کیا۔

متاثرہ لڑکی کے اہل خانہ اس کی تلاش کرتے رہے لیکن اس کا کچھ پتہ نہیں چلا۔ آخر میں اس کے گھر والے اور گاؤں والے تجارا تھانہ پولیسکو ساتھ لیکر ارنڈکا گاؤں پہنچے۔ پولیس اور گاؤں والوں نے ارنڈکا گاؤں کے مقامی خورشید خان کے مکان سے متاثرہ کو آزاد کرایا۔ متاثرہ لڑکی کی آپ بیتی سننے کے بعد گھر والے اسے تھانہ لیکر پہنچے اور ملزموں کے خلاف معاملہ درج کروایا۔

First published: Jan 31, 2020 02:35 PM IST