உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک کے گلدستہ میں ایک اور پھول نیوز -18 کیرالہ شامل

    ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک مسلسل نئی بلندیوں کو چھو رہا ہے۔ اسی سلسلہ میں منگل کو نیوز 18 کیرالہ چینل لانچ ہوا ۔ اس موقع پر کیرالہ کی راجدھانی ترواننت پورم میں ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا

    ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک مسلسل نئی بلندیوں کو چھو رہا ہے۔ اسی سلسلہ میں منگل کو نیوز 18 کیرالہ چینل لانچ ہوا ۔ اس موقع پر کیرالہ کی راجدھانی ترواننت پورم میں ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا

    ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک مسلسل نئی بلندیوں کو چھو رہا ہے۔ اسی سلسلہ میں منگل کو نیوز 18 کیرالہ چینل لانچ ہوا ۔ اس موقع پر کیرالہ کی راجدھانی ترواننت پورم میں ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      ترواننت پورم : ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک مسلسل نئی بلندیوں کو چھو رہا ہے۔ اسی سلسلہ میں منگل کو نیوز 18 کیرالہ چینل لانچ ہوا ۔ اس موقع پر کیرالہ کی راجدھانی ترواننت پورم میں ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا ،جس میں ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک کے ہیڈ جگدیش چندر، کیرالہ کے وزیر اعلی ، سابق وزیر اعلی اومن چانڈی اور وی ایس اچيتانندن سمیت متعدد معزز شخصیات نے شرکت کی ۔
      ایک خوبصورت رنگین ثقافتی پروگرام کے درمیان کیک کاٹ کر نیوز 18 کیرالہ نیوز چینل کا آغاز کیا گیا ۔ اس موقع پر ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک کے ہیڈ جگدیش چندر نے کہا کہ ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک ہمیشہ سے عوام کی آواز رہا ہے۔ نیوز 18 کیرالہ بھی لوگوں کے سکھ دکھ کا ساتھی بنے گا۔
      تقریب کے مہمان خصوصی اور کیرالہ کے وزیر اعلی نے نیوز 18- کیرالہ کو نیک خواہشات پیش کرتے ہوئے کہا کہ نیوز 18 کیرالہ کے ذریعے کیرالہ کی ملک بھر میں برانڈنگ ہوگی۔ وزیر اعلی نے ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک ہیڈ جگدیش چندر کی بھی ستائش کی۔
      کیرالا اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر رمیش چینتالا نے بھی ای ٹی وی کی پہل کی تعریف کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ یہ چینل کیرالہ کی ترقی میں مددگار ثابت ہوگا۔
      پردیش کے سابق وزیر اعلی اومن چانڈی نے بھی نیوز 18 کیرالہ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح سے ای ٹی وی نیوز نیٹ ورک ملک کے دیگر حصوں میں نمبر ون ہے، اسی طرح نیوز 18 کیرالہ بھی ریاست کا نمبر ون چینل ثابت ہوگا ۔ پردیش کے ایک اور سابق وزیر اعلی وی ایس اچيتانندن نے بھی نیوز 18 کیرالہ کی کامیابی کی دعا کی۔
      First published: