ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

گلبرگہ : اردو بورڈ کو لے کر سات آزاد کارپوریٹرس کی کانگریس سے حمایت واپس لینے کی دھمکی

گلبرگہ مہانگر پالیکے کی نئی عمارت پر اردو تحریر نہ ہونے کا معاملہ سنگین رخ اختیار کرتا جا رہا ہے۔ اردو کو نظر انداز کئے جانے کے خلاف احتجاجیوں نے میئر کی گاڑی پر کالا رنگ ڈالا

  • ETV
  • Last Updated: Feb 28, 2018 10:56 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
گلبرگہ : اردو بورڈ کو لے کر سات آزاد کارپوریٹرس کی کانگریس سے حمایت واپس لینے کی دھمکی
گلبرگہ مہانگر پالیکے کی نئی عمارت پر اردو تحریر نہ ہونے کا معاملہ سنگین رخ اختیار کرتا جا رہا ہے۔ اردو کو نظر انداز کئے جانے کے خلاف احتجاجیوں نے میئر کی گاڑی پر کالا رنگ ڈالا

گلبرگہ : گلبرگہ مہانگر پالیکے کی نئی عمارت پر اردو تحریر نہ ہونے کا معاملہ سنگین رخ اختیار کرتا جا رہا ہے۔ اردو کو نظر انداز کئے جانے کے خلاف احتجاجیوں نے میئر کی گاڑی پر کالا رنگ ڈالا، جس کے بعد پولیس نے احتجاجیوں کو گرفتار کرلیا ۔ دوسری جانب سات آزاد کارپوریٹرس نے کانگریس سے حمایت واپس لینے کی دھمکی دی ہے۔

مہا نگر پالیکے کی نئی عمارت پر اردو تحریر کا معاملہ اب تصادم کی شکل اختیار کر گیا ہے ۔ مسلسل نمائندگیوں کے باوجود اردو بورڈ نہ لگائے جانے پر اقلیتی تنظیموں نے مجلس بلدیہ کے دروازے کے باہر احتجاج کیا۔ احتجاج چل ہی رہا تھا کہ میئر صاحب گاڑی سے اترے اور سیدھے اندر چلے گئے۔ میئر کے نظر انداز کرنے پر احتجاجیوں نے سرکاری گاڑی پر کالا رنگ ڈال کر احتجاج کیا۔ میئر کے چیمبرمیں بھی اردو بورڈ کے تعلق سے خوب گہما گہمی دیکھی گئی۔ احتجاج میں شدت آنے کے بعد پولیس نے احتجاجیوں کو گرفتار کر لیا ۔

دوسری جانب اردو بورڈ معاملہ پر سیاست بھی گرما گئی ہے۔ سات آزاد کارپوریٹرس نے کانگریس سے حمایت واپس لینے کی دھمکی دی ہے۔ مجلس بلدیہ میں کانگریس کے صرف 23 کارپوریٹرس ہیں۔ آزاد کارپوریٹرس کی حمایت سے کانگریس گزشتہ چار برسوں سے بلدیہ پر قابض ہے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ2011 میں جنرل باڈی میٹنگ میں اردو کو گلبرگہ مہانگر پالیکے کی دوسری زبان کا درجہ دیا جا چکا ہے۔ 28 فروری کو اس عمارت کا افتتاح ہونا تھا، تاہم احتجاج کے پیش نظراس نئی عمارت کے افتتاح کو ملتوی کر دیا گیا ہے۔

First published: Feb 28, 2018 10:56 PM IST