ہوم » نیوز » وطن نامہ

سینیٹری نیپکن سے متعلق بیٹے کے سوال پر کیسے دیں جواب؟ اس طرح کرسکتے ہیں مطمئن

سات سال کے میرے بیٹے نے مجھ سے سینیٹری نیپکن کے اشتہار کے بارے میں پوچھا۔ میری سمجھ میں نہیں آیا کہ کیا کہوں ، لیکن میں نے کہا کہ جب کوئی لڑکی پیشاب کرنے کے لئے بیت الخلا جاتی ہے تو اس وقت وہ نیپکن کا استعمال کرتی ہے۔ تب سے وہ سینیٹری نیپکن کو ’ماما ڈائیپر’ بولنے لگا۔ مجھے برا لگتا ہے، لیکن میں نے اسے غلط جانکاری دی’۔

  • Share this:
سینیٹری نیپکن سے متعلق بیٹے کے سوال پر کیسے دیں جواب؟ اس طرح کرسکتے ہیں مطمئن
سینیٹری نیپکن سے متعلق بیٹے کے سوال پر کیسے دیں جواب؟ اس طرح کرسکتے ہیں مطمئن

سات سال کے میرے بیٹے نے مجھ سے سینیٹری نیپکن کے اشتہار کے بارے میں پوچھا۔ میری سمجھ میں نہیں آیا کہ کیا کہوں ، لیکن میں نے کہا کہ جب کوئی لڑکی پیشاب کرنے کے لئے بیت الخلا جاتی ہے تو اس وقت وہ نیپکن کا استعمال کرتی ہے۔ تب سے وہ سینیٹری نیپکن کو ’ماما ڈائیپر’ بولنے لگا۔ مجھے برا لگتا ہے، لیکن میں نے اسے غلط جانکاری دی’۔


ویسے تو یہ ضروری ہے کہ بچوں کو صحیح، ایماندار اور سیدھا جواب دیا جائے، لیکن بچوں کے اس طرح کے سوال پر گھبرا جانا اور جو سب سے مناسب لگے ویسا جواب دینا عام بات ہے۔ لیکن خود کی غلطی کو کبھی بھی سدھارا جاسکتا ہے۔ بلکہ اپنے بیٹے کو یہ کہنا کہ دیکھو، میں نے تمہیں غلط جانکاری دے دی ہے، اس سے نہ صرف اسے یہ پتہ لگے گا کہ میرے ماں - باپ بھی عام آدمی کی طرح ہیں اور دیگر لوگوں کی طرح وہ بھی غلطی کرسکتے ہیں۔ اس سے انہیں یہ سیکھ بھی ملے گی کہ آپ کسی بھی وقت خود کو سدھار سکتے ہیں اور نئی بات سیکھ سکتے ہیں۔ اپنے بیٹے کو یہ سبق پڑھانے کا آپ کے پاس موقع ہے۔


اب جہاں تک حقیقی سوال کی بات ہے، ایک چھوٹے لڑکے کو آپ ماہواری کے بارے میں کیسے بتائیں گے؟ آپ ایمانداری کا مظاہرہ کیجئے۔ سات سال کا آپ کا بیٹا اتنا بڑا ہوگیا ہے کہ وہ ماہواری کی بنیادی بات کو سمجھ سکے۔ یہ ضروری ہے کہ وہ تولیدی عمل میں شامل جسم کے اعضا جیسے اندام نہانی کے بارے میں پہلے سے جانکاری حاصل کرلیں۔


آپ اسے یہ باتیں کہہ سکتی ہیں۔ ’جب لڑکیاں بڑی ہوجاتی ہیں، مطلب وہ 13-12 سال کی ہوجاتی ہیں تو ان کے جسم میں کئی طرح کی تبدیلیاں آتی ہیں۔ یہ تبدیلیاں اس لئے آتی ہیں کیونکہ ان کے جسم کے ہارمون بنتے ہیں۔ جب یہ ہوتا ہے تو لڑکی کا جسم بچہ پیدا کرنے کے لئے تیار ہونے لگتا ہے۔ یہ ویسے ہی ہے، جیسے کسی مہمان کے آنے سے پہلے ممی گھر کو ٹھیک کرتی ہے، جب بچے نہیں آتے ہیں تو لڑکی کے جسم میں جو غیر ضروری چیزیں ہوتی ہیں، انہیں جسم خود ہٹاتا ہے تاکہ اس میں جگہ بنائی جاسکے اور اس عمل میں تھوڑا خون نکلتا ہے۔ یہ خون اس لئے نہیں نکلتا ہے کہ انہیں چوٹ لگتی ہے اور انہیں کوئی زخم ہوجاتا ہے بلکہ جسم بچے کے لئے جو تیاری کرتا ہے، اسی کی وجہ سے یہ نکلتا ہے’۔

ایک بار جب بچے کے من میں ماہواری کے بارے میں بنیادی باتیں واضح ہوجاتی ہیں، تب آپ اس کو سینیٹری نیپکن کی ضرورت کے بارے میں بتا سکتے ہیں کہ اس کا استعمال لڑکیاں اپنے جسم سے نکلنے والے اس خون کو سوکھنے اور اس طرح جسم کو صاف رکھنے کے لئے کرتی ہیں۔ آپ انہیں سینیٹری نیپکن دکھا بھی سکتی ہیں اور پانی کی مدد سے آپ یہ بھی بتا سکتی ہیں کہ وہ کیسے خون کو سوکھتا ہے۔ اس سے بڑے ہونے پر بچہ ماہواری کی بات کو لے کر مطمئن رہے گا۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 15, 2021 11:14 PM IST