உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مولانا مفتی محمد عظیم الدین صدر مفتی جامعہ نظامیہ کا انتقال، مذہبی، سیاسی و سماجی لیڈران نے پیش کیا اظہار تعزیت

    Youtube Video

    سرزمین دکن کے عالمی شہرت یافتہ عالم دین ، صدر مفتی جامعہ نظامیہ و سابق چیف ایڈیٹر دائرۃ المعارف العثمانیہ و صدرنشین مجلس اشاعت العلوم جامعہ نظامیہ کا کل رات انتقال ہوگیا۔

    • Share this:
      سرزمین دکن کے عالمی شہرت یافتہ عالم دین ، صدر مفتی جامعہ نظامیہ و سابق چیف ایڈیٹر دائرۃ المعارف العثمانیہ و صدرنشین مجلس اشاعت العلوم جامعہ نظامیہ کا کل رات انتقال ہوگیا۔ وہ بیاسی برس کےتھے۔ انہوں نے جامعہ نظامیہ میں دو مرحلوں میں چھتیس سال تک بحیثیت صدر مفتی خدمات انجام دیں اور آخر تک اس منصب پر فائز رہے۔ اس دوران انہوں نے زائد از پچاس ہزار باضابطہ فتوے صادر کئے۔

      مفتی صاحب کی نگرانی میں سینکڑوں علمی و فنی کتابوں کی اشاعت عمل میں آئی۔ مفتی صاحب کی نگرانی میں ان گنت مخطوطات ایڈٹ کے بعد شائع ہوئے۔ ان کتابوں کو نہ صرف ہندو پاک بلکہ عرب ممالک میں بھی مقبولیت حاصل ہوئی۔ وہ صدر مجلس علمائے دکن و مرکزی رویت ہلال کمیٹی حیدرآباد دکن کے ذمہ دار رکن رکین تھے

      نظام الاوقات رمضان اور اوقات الصلواۃ کو وہ عرصہ دراز سے مرتب کرکے جاری فرماتے تھے ۔ ۔ پسماندگان میں اہلیہ کے علاوہ چار تین دختران شامل ہیں ۔ نماز جنازہ آج بعد نماز ظہرجامعہ نظامیہ میں ادا کی گئی ، اور تدفین احاطہ بارگاہ شجاعیہ عیدی بازار میں عمل میں لائی گئی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: