உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مسلم پرسنل لاء بورڈ کے اجلاس میں ماڈل نکاح نامہ پر نہیں کیا گیاغور ، جانیں کیا ہے وجہ ؟ 

    حیدرآباد میں جاری مسلم پرسنل لابورڈ کے تین روزہ اہم اجلاس کے دوسرے دن بھی ماڈل نکاح نامہ سے متعلق کوئی غور خوض نہیں کیا گیا۔

    حیدرآباد میں جاری مسلم پرسنل لابورڈ کے تین روزہ اہم اجلاس کے دوسرے دن بھی ماڈل نکاح نامہ سے متعلق کوئی غور خوض نہیں کیا گیا۔

    حیدرآباد میں جاری مسلم پرسنل لابورڈ کے تین روزہ اہم اجلاس کے دوسرے دن بھی ماڈل نکاح نامہ سے متعلق کوئی غور خوض نہیں کیا گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      حیدرآباد : حیدرآباد میں جاری مسلم پرسنل لابورڈ کے تین روزہ اہم اجلاس کے دوسرے دن بھی ماڈل نکاح نامہ سے متعلق کوئی غور خوض نہیں کیا گیا۔قبل ازیں ایسا سمجھاجارہا تھا کہ اس اہم مسئلہ پر بورڈ کے عاملہ کے اجلاس میں تبادلہ خیال کیاجائے گا تاہم اس مسئلہ پر بورڈ کا اجلاس خاموش رہا۔
      بورڈ نے قبل ازیں اپنے کئی اجلاسوں میں طلاق ثلاثہ کی شدید مخالفت کی تھی اور زور دیتے ہوئے کہا تھا کہ طلاق ثلاثہ نہ دی جائے۔ اس نے مسلمانوں سے اپیل کی تھی کہ طلاق ثلاثہ دینے والوں کا سماجی بائیکاٹ کیا جائے۔ سمجھا جارہا تھا کہ ماڈل نکاح نامہ کے سلسلہ میں بورڈ کے اجلاس میں بات چیت ہوگی لیکن سہ روزہ اجلاس کے دوسرے دن بھی ماڈل نکاح نامہ کے بارے میں کچھ بھی نہیں کہا گیا ۔اس کو اس اہم اجلاس میں پیش کئے جانے پر یہ کافی موثر ثابت ہوسکتاتھا۔
      بورڈ کے حیدرآباد اجلاس سے پہلے ایسا کہا جارہا تھا کہ بورڈ اس پر کچھ نہ کچھ فیصلہ لے گا اور اس پر کوئی ٹھوس اقدام کیا جائے گا تاہم اس پر اجلاس خاموش رہا۔ بورڈ کے ترجمان مولانا خلیل الرحمن سجاد نعمانی نے کہا ’’ہم نے قبل ازیں کہا تھا کہ ماڈل نکاح نامہ کے مسئلہ کوکسی رکن کی جانب سے اٹھائے جانے پر ہم اس پر تبادلہ خیال کریں گے۔ ہنوز کسی نے اس مسئلہ کو نہیں اٹھایا ہے اسی لئے اس پر تبادلہ خیال نہیں کیا گیا ہے۔
      First published: