உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Asaduddin Owaisi: حیدرآبادکو فرقہ پرستی کا نہ بنایا جائے شکار، اسد الدین اویسی نے دیا بیان

    مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسدالدین اویسی۔ فائل فوٹو

    مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسدالدین اویسی۔ فائل فوٹو

    تاہم اب بھی پرانے شہر میں پولیس کی بھاری بندوبست ہے۔ شہر میں بدستور کشیدگی پائی جارہی ہے۔ بدھ کے روز چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ (K. Chandrashekar Rao) نے امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے میٹنگ کی۔ Asaduddin Owaisi

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Hyderabad | Karnataka | Mumbai | Delhi | Bihar
    • Share this:
      حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) نے بدھ کے روز بی جے پی کے معطل رکن اسمبلی راجہ سنگھ (Raja Singh) کے خلاف پیغمبر اسلام حضرت محمد ﷺ کے بارے میں گستاخانہ ریمارکس پر احتجاج جاری رکھنے کا عہد کیا ہے، انھوں نے مظاہروں کے درمیان امن کی برقراری کی اپیل کی ہے۔

      حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اور اے آئی ایم آئی ایم کے صدر بیرسٹر اسد الدین اویسی نے دیر رات ٹویٹس کا ایک سلسلہ پوسٹ کیا اور اپیل کی کہ یہ صورتحال راجہ سنگھ کی نفرت انگیز تقریر کا براہ راست نتیجہ ہے۔ اسے جلد از جلد جیل بھیجا جائے۔ میں امن برقرار رکھنے کی اپیل کا بھی اعادہ کرتا ہوں۔ حیدرآباد ہمارا گھر ہے، اسے فرقہ پرستی کا شکار نہیں ہونا چاہیے۔

      انہوں نے مزید کہا کہ تقریباً 90 احتجاج کرنے والے نوجوانوں کو رات گئے رہا کر دیا گیا۔ ڈی سی پی ساؤتھ سے میری نمائندگی پر شاہ علی بندہ اور آشا ٹاکیز سے 90 احتجاج کرنے والے نوجوانوں کو رہا کر دیا گیا ہے۔ اے آئی ایم آئی ایم کے ایم ایل اے احمد بن عبداللہ بلعلہ اور ہمارے کارپوریٹر ساری رات حالات کو پرسکون کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔ میں ان سے رابطے میں ہوں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Hyderabad : ٹی راجا سنگھ کے خلاف احتجاج جاری ، درجنوں مظاہرین کو کیا گیا گرفتار
      راجہ سنگھ کی جانب سے پیغمبر اسلام حضرت محمد ﷺ کے خلاف توہین آمیز ریمارکس 22 اگست کی رات کو ایک یوٹیوب ویڈیو میں پوسٹ کیے گئے تھے۔ اسے تب ہی ہٹا دیا گیا ہے۔ راجہ سنگھ نے اسے تلنگانہ حکومت کے جوابی طور پر پوسٹ کیا جس نے مزاحیہ اداکار منور فاروقی کو 20 اگست کو حیدرآباد میں پرفارم کرنے کی اجازت دی۔ اس نے شو میں خلل ڈالنے کی دھمکی دی تھی، لیکن پولیس نے اسے ایسا کرنے سے روک دیا تھا۔




      یہ بھی پڑھیں:Prophet Muhammad: راجہ سنگھ کے خلاف مزید 2 مقدمات درج، دوبارہ گرفتاری کا امکان



      تاہم اب بھی پرانے شہر میں پولیس کی بھاری بندوبست ہے۔ شہر میں بدستور کشیدگی پائی جارہی ہے۔ بدھ کے روز چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ (K. Chandrashekar Rao) نے امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے میٹنگ کی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: