ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

جگن کی بھوک ہڑتال ختم ۔پولیس نے رات دیر گئے اسپتال میں داخل کرایا

گنٹور:آندھراپردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے گزشتہ چھ دنوں سے بھوک ہڑتال کرنے والے ریاست کی اصل حزب اختلاف وائی ایس آر کانگریس کے رہنما وائی۔ ایس ۔جگن موہن ریڈی کی بھوک ہڑتال کو پولیس نے کل رات تقریبا چار بجے زبردستی طو ر پر ختم کرواتے ہوئے انہیں ایمبولینس میں گورنمنٹ جنرل اسپتال گنٹور منتقل کردیا ۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 13, 2015 12:39 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جگن کی بھوک ہڑتال ختم ۔پولیس نے رات دیر گئے اسپتال میں داخل کرایا
گنٹور:آندھراپردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے گزشتہ چھ دنوں سے بھوک ہڑتال کرنے والے ریاست کی اصل حزب اختلاف وائی ایس آر کانگریس کے رہنما وائی۔ ایس ۔جگن موہن ریڈی کی بھوک ہڑتال کو پولیس نے کل رات تقریبا چار بجے زبردستی طو ر پر ختم کرواتے ہوئے انہیں ایمبولینس میں گورنمنٹ جنرل اسپتال گنٹور منتقل کردیا ۔

گنٹور:آندھراپردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے گزشتہ چھ دنوں سے بھوک ہڑتال کرنے والے ریاست کی اصل حزب اختلاف وائی ایس آر کانگریس کے رہنما وائی۔ ایس ۔جگن موہن ریڈی کی بھوک ہڑتال کو پولیس نے کل رات تقریبا چار بجے زبردستی طو ر پر ختم کرواتے ہوئے انہیں ایمبولینس میں گورنمنٹ جنرل اسپتال گنٹور منتقل کردیا ۔


اس موقع پر بھو ک ہڑتالی کیمپ پہنچی پولیس کو ان کے حامیوں اور وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے لیڈروں و کارکنوں کی مخالفت کا سامنا کرنا پڑاجنہوں نے جگن کو اسپتال لے جانے کے لیے آئی پولیس کو روکنے کی کوشش کی اور جگن کی حمایت میں نعرے بازی کی تاہم پولیس نے جگن کو بھوک ہڑتالی کیمپ سے زبردستی طور پر اسپتال منتقل کردیا ۔


جگن کی صحت کل سے کافی خراب ہوگئی تھی ۔ ان کی نبض ، بی پی کافی کم ہوگیا تھا۔اسپتال میں ان کو داخل کرنے کے بعد ڈاکٹرس ان کو سیال(فلوئیڈز) غذا دے رہے ہیں۔ان کو اسپتال میں داخل کروانے کی اطلاع پاکر جگن کی والدہ و پارٹی کی کارگزار صدر وائی ایس وجئے اماں ، جگن کی اہلیہ بھارتی اور بہن شرمیلا بھی اسپتال پہنچ گئیں۔


اسپتال میں ڈاکٹرز جگن کو زبردستی طور پر سیال غذا دے رہے ہیں۔ان کو اسپتال کے انتہائی نگہداشت والے شعبہ آئی سی یو میں داخل کروایا گیا ہے۔ان سے اسپتال میں پارٹی کے سینئر لیڈروں نے بھی ملاقات کی اور ان کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔ان کو زبردستی اسپتال منتقل کرنے پر پارٹی کے لیڈروں نے ریاستی حکومت پر شدید نکتہ چینی کی۔


پارٹی کے سینئر لیڈر بوتسا ستیہ نارائنا نے کہاکہ اے پی کو خصوصی ریاست کے درجہ کے لیے مرکز کی طرف سے اعلان تک جگن اپنی بھوک ہڑتال کرنے کا ارادہ رکھتے تھے تاہم حکومت نے رات دیر گئے زبردستی طور پر ان کو اسپتال منتقل کردیا ۔انہوں نے کہاکہ ان کی پارٹی کے صدر کافی کمزور ہوگئے ہیں جس سے پارٹی کے دیگر لیڈروں اور کارکنوں میں تشویش پائی جاتی ہے۔


انہوں نے کہاکہ جگن بات بھی نہیں کر پارہے ہیں۔ڈاکٹرز نے ان کو مشورہ دیا تھا کہ وہ اپنی بھوک ہڑتال ختم کردیں لیکن جگن نے اپنی بھوک ہڑتال جاری رکھی تھی۔اسپتال میں داخل کروائے جانے کے بعد ڈاکٹرز نے جگن کے مختلف معائنے کئے ۔ان کے ساتھ ان کے کنبہ کے ارکان بھی اسپتال میں ہی موجود ہیں۔اسپتال کے باہر ان کے چاہنے والے اور پارٹی کے کارکنوں و لیڈروں کی کثیر تعداد دیکھی جارہی ہے جو اپنے رہنما کی صحت کے بارے میں کافی فکر مند ہیں۔

First published: Oct 13, 2015 12:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading